سیکریٹر ی خزانہ یونس ڈاگہ کو اچانک عہدے سے کیوں ہٹا دیا گیا ؟ صحافی طلعت حسین نے انتہائی شرمناک وجہ بتا دی

سیکریٹر ی خزانہ یونس ڈاگہ کو اچانک عہدے سے کیوں ہٹا دیا گیا ؟ صحافی طلعت حسین ...
سیکریٹر ی خزانہ یونس ڈاگہ کو اچانک عہدے سے کیوں ہٹا دیا گیا ؟ صحافی طلعت حسین نے انتہائی شرمناک وجہ بتا دی

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )حکومت نے سیکریٹری خزانہ یونس ڈھاگہ ہو عہدے سے فارغ کرتے ہوئے ان کی جگہ کانوید مران بلوچ کو تعینات کر دیا ہے تاہم ان کو ہٹائے جانے پر سینئر صحافی سید طلعت حسین بھی میدان میں آ گئے ہیں اور نہایت ہی شرمناک وجہ بیان کر دی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی طلعت حسین نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے کہا کہ ” حکومت نے یونس ڈھاگہ کو سیکریٹر ی خزانہ کے عہدے سے فارغ کر دیاہے ، نہایت کامیاب اور اہل سینئر بیوروکریٹ کے ساتھ گندگی کی طرح برتاﺅ کیا گیا اور اسے اٹھا کر باہر پھینک دیا گیا ، انہوں نے آئی ایم ایف کے سامنے مکمل سرینڈر کرنے کی مخالفت کی اور نصیحت کی کہ قومی مفاد کو ذاتی ایجنڈوں سے اوپر رکھا جائے ۔“

حکومت کی جانب سے یونس ڈھاگہ کو عہدے سے فارغ کرنے اور نوید کامران بلوچ کو تعینات کر دیا گیاہے جس کا نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیاہے ۔ یونس ڈھاگہ کو کابینہ ڈویژن رپورٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے جبکہ اس کے علاوہ معروف افضل کو نیا سیکریٹری کابینہ ڈویژن لگا دیا گیاہے ۔

یادرہے کہ سیکریٹری خزانہ اور مشیر خزانہ میں اختلافات کی خبریں عام تھیں اور انہیں عہدے سے ہٹائے جانے کی اطلاعات بھی تھیں۔ ڈان نیوز کے مطابق اعلیٰ سطح کے ذرائع نے بتایا کہ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) سے مذاکرات کے معاملے پر وزیراعظم کے مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ اور سیکریٹری خزانہ یونس ڈھاگا کے درمیان اختلافات پیدا ہوئے ہیں، یونس ڈھاگا کا خیال ہے کہ مشیر خزانہ ڈاکٹر حفیظ شیخ نے پاکستان کے لیے نامناسب معاہدے پر مذاکرات کیے اور دونوں کے درمیان یہ اختلافات آئی ایم ایف سے مذاکرات کے آخری مرحلے میں پیدا ہوئے۔

مزید : قومی