پنجاب پولیس کی خراب گاڑیوں کی مرمت کیلئے 9کروڑ روپے جاری

پنجاب پولیس کی خراب گاڑیوں کی مرمت کیلئے 9کروڑ روپے جاری

  

لاہور(کرائم رپورٹر) پنجاب پولیس کی ناکارہ گاڑیوں کو ٹھیک کرنے کے لیے آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے سی سی پی او لاہور، پی ایچ پی پولیس اور چار بڑے شہروں کا 9 کروڑ روپے تقسیم کر دئیے، پنجاب پولیس کی 550نئی گاڑیوں کی خریدار ی کے لیے ٹینڈرز کا عمل مکمل نہ ہو سکا، نئی گاڑیوں پر باڈیز لگانے کے لیے حکومت کی جانب سے 11کروڑ روپے بھی جاری کر دئیے گئے، ذرائع کے مطابق صوبے بھر میں سٹریٹ کرائم میں اضافہ ہونے پر سرکاری گاڑیوں کے فقدان اور ناکارہ گاڑیوں کو قرار دیاگیا ہے۔ پنجاب پولیس کے متعدد اضلاع کے تھانوں کی 50فیصد سے زائد سرکاری گاڑیاں ناکارہ ہو چکی ہیں۔

تھانوں کی حدود میں گشت نہ ہونے کے باعث جرائم پیشہ افراد کھلے عام وارداتیں کر نے میں مصروف ہیں جس کے باعث صوبے بھر میں کرائم کی شرح میں روز بہ روز اضافہ ہو تا جا رہا ہے، صوبے کے پولیس افسران کی جانب سے سرکاری گاڑیوں کے خراب ہونے کی شکایت کو دور کرنے کے لئے آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے حکومت پنجاب سے سرکاری گاڑیوں کو ٹھیک کروانے کے لئے پیسوں کا مطالبہ کیا تھا جس پر حکومت کی جانب سے مطالبے کو منظور کرتے ہوئے ا?ئی جی پنجاب کو 9کروڑ روپے کی سپلمنٹری گرانٹ دی گئی ہے، آئی جی پنجاب شعیب دستگیر نے سرکاری ناکارہ گاڑیوں کو ٹھیک کرنے کے لئے سی سی پی او لاہو رکو ساڑھے تین کروڑ روپے، پنجاب ہائی وے پٹرول پولیس کو ایک کروڑ 80لاکھ روپے، سی پی او ملتان، سی پی او گوجرانوالہ، سی پی او فیصل آباد اور سی پی او راولپنڈی کو چار کروڑ روپے کے قریب دئیے گئے ہیں۔ اس سے قبل حکومت پنجاب نے پنجاب پولیس کی 550نئی گاڑیوں کی خریدار ی کے لیے سوا دو ارب روپے کی رقم جاری کر دی ہے جبکہ نئی خریدی جانے والی گاڑیوں پر لوہے کی باڈیز لگانے کے لئے 11کروڑ روپے بھی ادا کردئیے ہیں۔ پولیس ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ آئی جی پنجاب کی جانب سے ناکارہ گاڑیوں کو ٹھیک کروانے کے لیے جاری ہونے والے پیسوں سے ناکارہ گاڑیاں ٹھیک کروائی جائیں گی۔

مزید :

علاقائی -