چینی کمیشن رپورٹ میں مراد علی شاہ کا نام جان بوجھ کر دشمنی کے سبب شامل کیا گیا: ناصر شاہ

  چینی کمیشن رپورٹ میں مراد علی شاہ کا نام جان بوجھ کر دشمنی کے سبب شامل کیا ...

  

کراچی(آئی این پی)صوبائی وزیر اطلاعات، بلدیات، جنگلات وجنگلی حیات و مذہبی امور سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ چینی بحران کی رپورٹ سے یہ واضح ہوتا ہے کہ اس میں وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا نام دشمنی کے سبب لیا گیا ہے جو کہ اس رپورٹ کے دائرہ کار میں نہیں تھا بلکہ وزیر اعلیٰ سندھ کا نام اس میں جان بوجھ کر شامل کیا گیا۔ جمعہ کو اپنے ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ اصل میں ٹرمز آف ریفرنس کے مطابق جن سالوں میں اس کی انکوائری کی جانی تھی وہ ادوار وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے ادوار ہیں جن کا نام اس رپورٹ میں شامل ہی نہیں کیا گیا۔ سید ناصر حسین شاہ نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ کے زمانے کی تحقیقات پہلے ہی کروائی جاچکی ہے لیکن اس انکوائری رپورٹ میں وزیر اعلیٰ پنجاب کا نام نہ ہونے سے یہ واضح ہوگیا ہے کہ رپورٹ کے کیا مقاصد ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی کابینہ میں بیٹھے ہوئے لوگوں کو صاف طور پر بچا لیا گیا ہے، واضح ہوتا ہے کہ یہ پی ٹی آئی کے آپس کے اختلافات ہیں اور جہانگیر ترین پر اس کاملبہ ڈالا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اومنی گروپ ایک بہت پرانا کاروباری ادارہ ہے، ا س کو پیپلز پارٹی سے جوڑنا قطعاً مناسب نہیں۔ دریں اثناء سندھ کے وزیر اطلاعات سید ناصر حسین شاہ نے کراچی میں پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائنز کے طیارے کو پیش آنے والے حادثے کے نتیجے میں ہونے والی قیمتی جانوں کے ضیاع پر انتہائی رنج و غم کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس دلخراش واقعے پر انتہائی غمگین ہیں۔

جان بوجھ کر

مزید :

صفحہ آخر -