بھارت کوئی نئی مہم جوئی کر سکتا ہے، پاکستان نے اقوام متحدہ کو آگاہ کر دیا

  بھارت کوئی نئی مہم جوئی کر سکتا ہے، پاکستان نے اقوام متحدہ کو آگاہ کر دیا

  

اسلام آباد (آئی این پی)وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتیرس سے جمعہ کو ٹیلی فون پر بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر میں بگڑتی ہوئی سنگین صورتحال پر گفتگو کی اور واضح کیاکہ اپنے داخلی مسائل، بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر میں قابض افواج کے ظلم وجبر، مسلمانوں کے خلاف نسلی تعصب، نفرت اور اسلام مخالف اقدامات سے دنیا کی توجہ ہٹانے کیلئے بھارت کوئی فالس فلیگ آپریشن اور کوئی نئی مہم جوئی کرسکتا ہے، پاکستان عالمی برادری کو اس ضمن میں مسلسل پیشگی خبردار کرتا آیا ہے، بھارت کی طرف سے کسی بھی عاقبت نااندیشانہ اقدام کاپاکستان بڑا موثر جواب دے گا، وزیرخارجہ نے قابض بھارتی افواج کی جانب سے فوجی چھاپوں، ظالمانہ کارروائیوں میں مزید تیزی اور مقبوضہ خطے میں آبادی کاتناسب تبدیل کرنے کی بھارتی کوششوں پر پاکستان کی سنگین تشویش کا اظہار کیا۔ اس ضمن میں وزیر خارجہ نے بھارت کے زیرقبضہ جموں وکشمیر میں حالیہ ڈومیسائل قانون کا حوالہ دیا جو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں، چوتھے جنیوا کنونشن اور عالمی قانون کی صریحاً خلاف ورزی ہے۔ کورونا وباکے بحران کی آڑ میں بھارت نے مقبوضہ وادی میں لاک ڈاون مزید سخت کردیا ہے، جعلی مقابلوں اور تلاشی کی کارروائیوں کی آڑمیں کشمیریوں کو جبروتشدد کی مزید سفاکانہ نئی لہر کا نشانہ بنایاجارہا ہے، ماورائے عدالت ہلاکتوں اور دیگر استبدادی اقدامات میں اضافہ ہوگیا ہے۔سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ نے گفتگو کے آغاز میں پی آئی اے کی پرواز 8303کے کریش اور انسانی جانوں کے ضیاع پر انتہائی افسوس کا اظہار کیا۔ وزیر خارجہ نے تعزیت پر سیکریٹری جنرل کا شکریہ ادا کیا اور انہیں ممکنہ جانی نقصان اور اب تک کی صورتحال سے آگاہ کیا۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اعادہ کیا کہ پاکستان نام نہاد لانچ پیڈز سے متعلق دعوے کی ساکھ جانچنے کے لئے اقوام متحدہ کے فوجی مبصر گروپ برائے بھارت اور پاکستان کو اجازت دینے کے لئے آمادہ ہے، اگر بھارت کوئی متعلقہ مصدقہ معلومات فراہم کرے۔بھارت کی سیاسی وعسکری اسٹیبلشمنٹ کی طرف سے جنگی جنون پر مبنی بیانات خطے میں امن وسلامتی کے لئے خطرات بڑھا رہے ہیں۔

شاہ محمود قریشی

مزید :

صفحہ اول -