قو م جانتی ہے شوگر مافیا کا سب سے بڑا سرغنہ شریف خاندان ہے: شبلی فراز

    قو م جانتی ہے شوگر مافیا کا سب سے بڑا سرغنہ شریف خاندان ہے: شبلی فراز

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر شبلی فراز کا کہنا ہے پوری قوم جانتی ہے شوگر مافیا کا سب سے بڑا سرغنہ شریف خاندا ن ہے۔گزشتہ روز ایف آئی اے کی جانب سے جاری کردہ چینی کمیشن رپورٹ پر ردعمل دیتے ہوئے شبلی فراز نے کہا کہ شریف خاندان نے سیاست کو کاروبار کیلئے استعمال کیا۔وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ دولت کی ہوس شریف خاندان کی سیاست کا محور رہا، شریف خاندان نے اداروں کا بیدردی سے استعمال کیا، شریف مافیا نے ہمیشہ عوام کا استحصال کیا۔ پوری قوم جانتی ہے شوگر مافیا کا سب سے بڑا سر غنہ شریف خا ند ا ن ہے جبکہ عمران خان کی سیاست غریب عوام کے حقوق کیلئے ہے۔گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان کی ہدایت پر چینی کمیشن رپورٹ پبلک کی گئی تھی جس میں بتایا گیا کہ جہانگیر ترین، مونس الٰہی، شہباز شریف، عمر شہریاراور اومنی گروپ نے چینی سے بے تحاشا پیسہ بنایا۔ شہبا ز شریف، شاہد خاقان عباسی، مونس الٰہی اور ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضیٰ وہاب نے چینی کمیشن رپورٹ میں لگائے گئے الزامات کو بے بنیاد قرار دیا۔شہباز شریف کا کہنا تھا شوگر انکوائری رپورٹ دھوکا ہے جبکہ شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ رپورٹ میں اصل چینی چور عثمان بزدا ر اور رعمران خان کا ذکر تک نہیں۔جہانگیر ترین نے خود پر لگنے والے الزامات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہر الزام کا جواب دینگے جبکہ مونس الٰہی کا کہنا تھا کسی بھی شوگر مل کی انتظامیہ یا بورڈ کا حصہ نہیں ہوں۔ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب نے بھی اومنی گروپ کو چینی پر سبسڈی دینے کا الزام مسترد کیا۔

شبلی فراز

اسلام آباد ( آن لائن) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ غریب اور پسماندہ طبقہ کی بحالی وزیراعظم کی اولین ترجیح ہے، پاکستان مشکل دور سے گزر رہا ہے اور یہ وقت نکل جائے گا۔ وہ جمعہ کو پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ میں اخبار فروشوں میں پاکستان بیت المال اور اپیل پاکستان کے زیر اہتمام راشن کی تقسیم کی تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں بھی کورونا وبا اسی شدت سے آئی سے لیکن اللہ کا شکر کہ وہ نقصانات نہیں ہوئے جو دیگر ممالک میں ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ اس وباء اور اس سے بچاؤ کیلئے لاک ڈاؤن سے دیہاڑی دار طبقہ سب سے زیادہ متاثر ہوا۔ وزیراعظم عمران خان کی خصوصی توجہ دیہاڑی دار، یومیہ اجرت والے طبقہ پر تھی۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے ان کے معاشی مسائل کو سامنے رکھتے ہوئے اس وبا سے پیدا ہونے والی صورتحال سے زیادہ متاثر افراد کیلئے ایمرجنسی کیش گرانٹ پروگرام شروع کیا جس کے تحت90 لاکھ مستحق خاندانوں میں نقد رقم تقسیم کی گئی۔انہوں نے کہا کہ انہیں بہت خوشی ہے کہ پاکستان بیت المال اور اپیل پاکستان نے اس صورتحال میں اپنا حصہ ڈالااور ایسے طبقہ کا انتخاب کیا جو اخبار فروش ہے۔ انہوں نے کہا کہ عام طور پر آپ دیکھتے ہیں کہ علی الصبح گرمی، سردی، بارش، طوفان میں آپ کے گھر اخبار پہنچتاہے، اس کے پیچھے اس طبقہ کی نیند اور وقت کی قربانی ہوتی ہے، اس وبا سے ان کی آمدن پر بھی فرق پڑاہے اور یہ طبقہ بھی متاثر ہوا ہے۔انہوں نے سیکرٹری جنرل اخبار فروش یونین ٹکا خان کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے ہمیشہ استقامت سے اخبار فروشوں کا مقدمہ لڑا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت اخبار فروش طبقہ کیلئے جلد کیش پیکیج کی خوشخبری دے گی، ملکی سطح پر ساڑھے چار ہزار لوگ اس شعبہ سے وابستہ ہیں، حکومت محدود وسائل کے باوجود پوری طرح کوشاں ہے اور وزیراعظم ہر وقت ان کیلئے سوچتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کیلئے یہ سخت مشکل وقت ہے تاہم اس سخت وقت سے نکل جائیں گے۔ انہوں نے عوام سے کہا کہ اس وباء کے پھیلاؤ کی روک تھام کیلئے حفاظتی تدابیر اختیار کی جائیں، ہم نے اس وباء سے لڑنا بھی ہے اور آگے بھی بڑھنا ہے۔

شبلی فراز

مزید :

صفحہ اول -