عوام عید نماز گھروں میں ادا کریں، گلے ملنا انفیکشن کے پھیلاؤ کا موجب بن سکتا ہے: ڈاکٹر ظفر مرزا

عوام عید نماز گھروں میں ادا کریں، گلے ملنا انفیکشن کے پھیلاؤ کا موجب بن سکتا ...

  

اسلام آباد (آن لائن) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے ایک دن میں 2603 کیسز رپورٹ اور 50 اموات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے پوری قوم سے اپیل کی ہے کہ لاک ڈاؤن میں نرمی کے دوران بازاروں، پرہجوم جگہوں، شاپنگ مالز اور دکانوں میں ماسک کا استعمال لازمی، سماجی فاصلہ برقرار رکھیں بصورت دیگر صورتحال مزید بگڑ سکتی ہے، یہ عید گذشتہ تمام عیدوں سے مختلف ہو گی، عیدالفطر کے موقع پر گلے نہ ملیں، سماجی فاصلہ برقرار رکھیں، 50 سال سے زائد عمر کے لوگ گھروں میں ہی رہیں۔وہ جمعہ کو نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) میں میڈیا کو بریفنگ دے رہے تھے۔ معاون خصوصی ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہپاکستان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں 50 اموات سب سے زیادہ ہے، اتنے کیسز 24 گھنٹوں میں اب تک سامنے نہیں آئے، جو ٹیسٹنگ گزشتہ چوبیس گھنٹے میں ہوئی وہ ایک ریکارڈ ہے، اگر ہم 24 گھنٹوں کے کیسز اور اموات کو سامنے رکھیں تو صورتحال تشویشناک ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ تب ہورہا جب ہم نے تمام صورتحال کو سامنے رکھتے ہوئے لاک ڈاؤن میں نرمی کی، رمضان کے شروع میں ہم نے ایس او پیز بنائے اْن پر عمل ہوا بھی اور نہیں بھی ہوا،لاک ڈاؤن میں جو ہم نے آسانیاں پیدا کیں تاکہ لوگ احتیاط کرتے ہوئے عید شاپنگ کر سکیں، شاپس، ٹرانسپورٹ اور شہریوں کے لیے ایس او پیز سامنے رکھے گئے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ ہفتوں میں مشاہدہ انتہائی غیر تسلی بخش رہا، افطاری سے پہلے بازاروں اور گلی محلوں میں صورتحال مزید بگڑ جاتی ہے،گر ہم نے احتیاطی تدابیر کو مدنظر نہ رکھا تو صورتحال مزید بدترین ہوسکتی ہے ہم کسی کو الزام بھی نہیں دے سکیں گے،کورونا وائرس پھیلاؤ کو روکنے کا بنیادی نقطہ سماجی فاصلوں کو برقرار رکھنا ہے،شاپنگ اور پبلک ٹرانسپورٹ کے حوالے سے ایس او پیز میں ماسک کا استعمال ضروری قرار دیا گیا ہے،کسی بھی پرہجوم جگہ یا پبلک ٹرانسپورٹ پر ماسک کا استعمال اب ضروری ہوچکا ہے، عید کی نماز وہی تمام تدابیر اپنائیں جو رمضان میں تراویح اور مساجد میں اپنائی گئیں۔انہوں نے کہا کہ بجائے مسجد میں جانے کے گھروں میں عید کی نماز ادا کریں، اگر آپ لاک ڈاؤن سے متاثرہ لوگوں کو جانتے ہیں تو ان کی دل کھول کر مدد کریں۔ انہوں نے کہا کہ یہ عید مختلف عید ہے آپ نے ایک دوسرے سے گلے نہیں ملنا,فاصلہ رکھتے ہوئے ایک دوسرے کو عید مبارک کہیں،گلے ملنا انفیکشن کے پھیلاؤ کا موجب بن سکتا ہے بڑی تیزی سے وائرس پھیل سکتا ہے۔#/s#

ظفر مرزا

مزید :

صفحہ اول -