زی فائیو کے چینل زندگی کو ڈی ٹی ایچ کے ذریعے ٹی وی پر دکھانے کے انتظامات مکمل، پاکستانی ڈرامے دکھائے جائیں گے

زی فائیو کے چینل زندگی کو ڈی ٹی ایچ کے ذریعے ٹی وی پر دکھانے کے انتظامات ...
زی فائیو کے چینل زندگی کو ڈی ٹی ایچ کے ذریعے ٹی وی پر دکھانے کے انتظامات مکمل، پاکستانی ڈرامے دکھائے جائیں گے

  

لاہور(حسن عباس زیدی ) بھارتی سٹریمنگ ویب سائٹ ’زی فائیو‘ نے اپنے چینل ’زندگی‘ کو ڈائریکٹ ٹو ہوم (ڈی ٹی ایچ) کے ذریعے ٹی وی سکرین پر دکھانے کے انتظامات مکمل کرلئے۔’زندگی‘ پر ابتدائی طور پر پاکستان کے مشہور ڈراموں’ ’زندگی گلزار ہے“، کتنی گرہیں باقی ہیں، عون زارا اور صدقے تمہارے‘ جیسے ڈراموں کو نشر کیا جائے گا، جس کے بعد مزید معروف پاکستانی ڈراموں اور شوز کو بھی نشر کیا جائے گا۔علاوہ ازیں ممکنہ طور پر بعد ازاں ’زندگی‘ ٹی وی پر پاکستانی فلموں اور ویب سیریز کو بھی دکھایا جائے گا۔

خیال رہے کہ ’ڈائریکٹ ٹو ہوم‘ یعنی ڈی ٹی ایچ ٹیکنالوجی کے تحت شائقین کو ڈش اینٹینا نما ایک ڈیجیٹل باکس گھر میں نصب کرنا پڑتا ہے، جو براہ راست متعدد ٹی وی چینلز کے سگنل انٹرنیٹ کی طرح کیچ کرکے ان کی نشریات دکھاتا ہے۔اس ٹیکنالوجی کے تحت ایک ڈی ٹی ایچ باکس ایک ٹی وی کے ساتھ منسلک ہوتاہے اور ایک باکس 500 سے زائد ٹی وی چینلز دکھانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ڈی ٹی ایچ باکس چھوٹے سائز کا ہوتا ہے، جسے گھر میں کہیں بھی آسانی سے نصب کیا جا سکتا ہے، اس سے ٹی وی چینلز کے سگنل کیبل کے مقابلے انتہائی صاف آتے ہیں۔جس کے بعد اب بھارتی گھروں میں پاکستانی ڈرامے بھی آسانی سے دیکھے جا سکیں گے۔

’زی فائیو‘ کے ’زندگی‘ چینل پر پہلے ہی پاکستانی ڈرامے، ویب سیریز، شوز اور فلموں کو آن لائن پیش کیا جا رہا ہے، تاہم اب بھارتی شائقین انہیں ٹی وی سکرین پر بھی دیکھ سکیں گے۔ہندوستانی میڈیانے ’زندگی‘ کی چیف کریئیٹو افسر (سی سی او) کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ مذکورہ سٹریمنگ پلیٹ فارم کو ڈی ٹی ایچ ٹیکنالوجی کے ذریعے ٹی وی چینل کی طرح چلایا جائے گا اور شائقین گھروں میں بیٹھ کر پاکستانی ڈرامے دیکھ سکیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ان کی ٹیم کی ہمیشہ سے خواہش رہی تھی کہ کسی طرح پاکستانی ڈراموں کو بھارتی شائقین کے لیے پیش کیا جا سکے، تاکہ دونوں ممالک کے عوام ایک دوسرے کی ثقافت اور رہن سہن سے مزید مستفید ہو سکیں۔ بتایا گیا ہے  کہ بھارتی شائقین ’زندگی‘ ٹی وی کو مئی کے اختتامی ہفتے سے ڈی ٹی ایچ ٹیکنالوجی کے ذریعے دیکھ سکیں گے۔

مزید :

تفریح -