بچوں نے اسرائیلی حمایت یافتہ کمپنی کی آفر ٹھکرا دی،جویریہ سعود

  بچوں نے اسرائیلی حمایت یافتہ کمپنی کی آفر ٹھکرا دی،جویریہ سعود

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

  لاہور(فلم رپورٹر)اداکارہ جویریہ سعود نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کے بچوں نے اسرائیل اور حماس جنگ کے ردعمل میں ہونے والی بائیکاٹ مہم کا حصہ بنتے ہوئے امریکی مشروب کمپنی کی آفر ٹھکرا دی۔ سماجی پلیٹ فارم انسٹاگرام پر اداکارہ جویریہ سعود نے اپنے مداحوں کو بتایا کہ ان کے بچوں جنت سعود اور ابراہیم سعود کو ٹی وی سی میں پرفارم کرنے کی پیشکش ہوئی لیکن انہوں نے فلسطینی مسلمانوں کے خلاف سرگرم اسرائیل کی حمایت کرنے والی کمپنی کے ساتھ کام کرنے کی پیشکش ٹھکرادی۔اداکارہ کا کہنا تھا کہ یہ پروجیکٹ ترکیہ میں شوٹ ہونا تھا تاہم بچوں نے یہاں کام کرنے سے نہ صرف خود انکار کیا بلکہ انہیں اور سعود کو بھی قائل کیا کہ وہ اس شوٹ کا حصہ نہ بنیں۔جویریہ سعود نے لکھا کہ ان کے بچے اسرائیل کی حمایت کرنے والی کمپنی کے ساتھ کام کرکے اپنے اصولوں سے سمجھوتہ نہیں کرنا چاہتے تھے۔انہوں نے بتایا کہ ان کے بچوں کا کہنا تھا کہ ’اگر ہم کچھ اور نہیں کر سکتے تو کم از کم بائیکاٹ کر کے چھوٹا سا کردار ادا کر سکتے ہیں۔

 اداکارہ نے کہا کہ بچوں کی یہ باتیں سن کر انہیں سورہ الفیل کا خیال آیا، اللہ سب کو ایسے ایماندار اور اصول پسند بچے عطا فرمائیں۔اداکارہ کے بچوں کی جانب سے آفر ٹھکرانے پر سوشل میڈیا صارفین نے انہیں سراہا اور بچوں کی بہترین پرورش کی تعریف کی۔

 یاد رہے کہ امریکی اور اسرائیلی کمپنیوں کے خلاف بائیکاٹ مہم اس وقت عروج پر پہنچی جب اسرائیل میں میکڈونلڈز کی فرنچائزز رکھنے والی کمپنی الونیال نے 7 اکتوبر کو فلسطینی گروپ حماس کے حملے کے فوراً بعد اعلان کیا تھا کہ وہ اسرائیلی فوج کو مفت کھانا فراہم کرے گی۔جس کے بعد دنیا بھر کے مسلم ممالک کے علاوہ یورپی ممالک میں بھی امریکی اور اسرائیلی کمپنیوں کے بائیکاٹ کا سلسلہ جاری ہے۔

مزید :

کلچر -