بیماری بھی حسن بخشتی ہے۔ ۔ ۔

بیماری بھی حسن بخشتی ہے۔ ۔ ۔
بیماری بھی حسن بخشتی ہے۔ ۔ ۔

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ایک تحقیق سے انکشاف ہواہے کہ چہرے سے کم عمر نظر آنے والی خواتین بلندفشارخون کے مرض میں مبتلا نہیں ہوتی ہیں بلکہ تر و تازہ اور شاداب چہرہ رکھنے والی خواتین کا بلڈ پریشر عام طور پر کم رہتا ہے جس سے ان میں نہ صرف قلبی مسائل خاص طور پر دل کا دورہ اور فالج کاخطرہ کم ہوتا ہے بلکہ زندگی بھی بڑھتی ہے۔ تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ کم عمر اور معصوم چہرہ رکھنے والی خواتین میں اپنی ہم عمر پختہ چہرہ رکھنے والی خواتین کی نسبت طویل زندگی جینے کا امکان موجود ہوتا ہے۔لیڈین یونیورسٹی میڈیکل سینٹر نیدر لینڈ سے وابستہ ٹیم کا کہنا ہے کہ پہلی بارایک فرد کی متوقع عمرکو براہ راست جلد کی عمرکی رفتار کےساتھ منسلک کیا گیا ہے۔نیدرلینڈ میں ہونیوالی تحقیق کے سربراہ ڈیوڈگن نے کہا کہ مطالعہ میں دل امراض اور ایک شخص کی متوقع عمر کے حوالے سے خطرات کو آگے بڑھانے میں ہائی بلڈپریشر( بلند فشارخون) کے تعلق کی نشاندہی کی گئی ہے اور پہلی بار نوجوان نظر آنے کو ”لوبلڈ پریشر“ سے منسوب کیا گیا ہے۔وائس آف امریکہ کے مطابق ڈیوڈگن کا کہنا تھا کہ بلند فشار خون کے اثرات کو چہرے کی جھریوں سے منسلک نہیں کیا گیا ہے بلکہ بلند فشار خون چہرے پر پختگی کی صورت میں ظاہر ہوتا ہے۔ مزید تحقیق میں اس بات کا پتا لگایا جائے گا کہ بلند فشار خون سے چہرے کا کونسا حصہ زیادہ متاثر ہوتا ہے۔تحقیق میں 514 بالغ افراد کو شامل کیا گیا جن کی اوسط عمر 63 برس تھی ،اُنہیں دل کا دورہ اورفالج کے خطرات کی شرح کے لحاظ سے دو گروپوں میں تقسیم کیا گیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -