مشرف کا ساتھ دینے والوں کو بھی قانون کے کٹہرے میں لایا جائے، غلام قطب الدین

مشرف کا ساتھ دینے والوں کو بھی قانون کے کٹہرے میں لایا جائے، غلام قطب الدین

  

لاہور (سٹاف رپورٹر) صدر نیشنل مشائخ کونسل غلام قطب الدین فریدی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ پرویز مشرف کے خلاف غداری کیس ہر صورت انجام کو پہنچنا چاہیے پرویز مشرف سنگین غداری کیس پاکستان کی تاریخ کا اہم ترین کیس ہے جس کے فیصلے کے منفی و مثبت اثرات پاکستان کی مستقبل کی سیاست پر یقینا مرتب ہونگے اس کے علاوہ مشرف کا ساتھ دینے والوں کو بھی قانون کے کٹہرے میں لایا جائے لیکن اگر پرویز مشرف کے حواریوں کو عدالت میں پیش نہ کیا گیا تو اس کا بھی خطرناک نتیجہ نکل سکتا ہے اس لےے ضروری کے پرویز مشرف کے ساتھیوں کو بھی انصاف کے کٹہرے میںکھڑا کیا جائے قانونی ماہرین کی رائے میں ایمرجنسی کے نفاذ کا مشورہ دینے اور اس کے نفاذ میں معاونت کرنے والے بھی آرٹیکل 6 کی زد میں آتے ہیں غلام قطب الدین فریدی نے مزید کہا ہے کہ جمہوریت پاکستان کی روح ہیں اگر روح کو نکال لیا جائے تو جسم بے جان ہو جاتا ہے اس لیے ہمیں اس روح کی حفاظت کرنا ہوگی پاکستان کو اس وقت دہشت گردی اور دیگر بحرانوں کا سامنا ہے لیکن ہمیں مل جل کر ان بحرانوں پر قابو پانا ہوگا ۔

پاک فوج کی دہشت گردوں کے خلاف جاری جنگ اس ملک میں امن و امان بحال کرنے کی بڑی مثال ہے اس جنگ میں ہمارے کئی فوجی جوان شہید ہوگئے ہیں جن کی شہادتوں کو آنے والی نسلیں بھی یاد رکھیں گی

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -