کالا باغ ڈیم لوڈشیڈنگ ،قحط سے بچنے کا واحد کا حل ہے ،شجاعت ،پرویز الٰہی

کالا باغ ڈیم لوڈشیڈنگ ،قحط سے بچنے کا واحد کا حل ہے ،شجاعت ،پرویز الٰہی ...

  

                               بہاولپور/لاہو(ر خصوصی رپورٹ)مسلم لیگ ق کے سینئرمرکزی رہنما چودھری پرویزالٰہی نے کہا ہے کہ ہم نے کسانوں اور مزدوروں سمیت ہر شعبہ میں خوشحالی دی، یہ فاقے، ڈاکے اور بیماریاں دے رہے ہیں، میں آج پھر اپنی 5اور شہبازشریف کی 10سالہ کارکردگی پر مناظرہ کا چیلنج دیتا ہوں، جو چاہے موازنہ کر لے ہماری حکومت نے جنوبی پنجاب سمیت پورے صوبہ میں فری تعلیم، کتابیں، ادویات دیں، طلبہ، اساتذہ، ڈاکٹروں، وکلاءسمیت ہر شعبہ زندگی کے افراد کیلئے انقلابی کام کیے، انہوں نے فیل سکیمیں دیں، ہمارے دور میں 5 روپے والی بجلی آج 18 روپے فی یونٹ ہے، ، کالاباغ ڈیم بنانے سے 24گھنٹے 2.50روپے فی یونٹ ملے گی۔ وہ بہالپور کے ڈرنگ سٹیڈیم میں بہت بڑے اور تاریخی جلسہ سے خطاب کر رہے تھے جس میں حاضرین نے ریکارڈ تعداد میں شرکت کی، پاکستان مسلم لیگ کے دھرنوں کے بعد پہلا عوامی جلسہ سیاسی طاقت کا بھرپور مظاہرہ تھا جس میں شرکاءکا جوش و خروش مثالی تھا، مختلف علاقوں سے لوگوں کی ٹولیاں رقص کرتے اونٹوں کے ساتھ بھی جلسہ گاہ پہنچیں، ہر طرف پارٹی پرچموں کی بہار تھی اور کارکن نعرے لگاتے دیوانہ وار رقص کرتے گونوازگو، گوشہبازگو کے نعرے لگا رہے تھے۔ اپنے خطاب میں طارق بشیر چیمہ نے کہا کہ جھوٹے وعدوں کے فریب میں ن لیگ کو ووٹ دینے والے پشیمان ہیں، یہ تاریخی جلسہ پاکستان مسلم لیگ کی خدمات و مقبولیت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔     چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ جنوبی پنجاب، پنجاب کی جان ہے، ہم نے اپنے دور میں اس کا احساس محرومی ختم کرنے کیلئے ہر معاملہ میں اسے اولیت دی لیکن پچھلے چند سال میں آپ سے مسلسل زیادتیاں کی گئیں، عوامی فلاح کے ہمارے منصوبوں پر عمل روک دیا گیا لیکن دروغ، دھوکے اور دھاندلی پر کھڑی حکومت کے دن گنے جا چکے ہیں، وہ وقت دور نہیں جب پنجاب کے فیصلے وہ لوگ کریں گے جو پنجاب کے ہر شہر، گاﺅں اور قصبے سے ایک جیسی محبت کرتے ہیں، پنجاب کو ہم نے خوشحال چھوڑا تھا، آج بدحال اور بری طرح مقروض ہے، آج فیصلہ کرنا مشکل ہے کہ پنجاب میں مہنگائی اور غربت زیادہ بڑھی ہے یا جرائم، جھوٹ کے سوداگر کل تک 6 ماہ میں لوڈشیڈنگ ختم کرنے کی قسمیں کھاتے تھے اب 5 سال بعد کی تاریخیں دے رہے ہیں، پاکستان کا موجودہ حکمران خاندان مزدور اور کسان کا بدترین دشمن ہے، کپاس کے ایک ایکڑ میں کھاد کی 6 بوریاں پڑتی ہیںاورایکبوریکی قیمت 4 ہزار روپے سے زیادہ ہے جبکہ سرکاری قیمت صرف 2500 روپے ہے، یہ جنوبی پنجاب سے کس بات کا انتقام لے رہے ہیں؟ کپاس چننے والی ہماری محنت کش بچیوں، بیبیوں کو کہیں 250 روپے اور کہیں 400 روپے من کے حساب سے مزدوری مل رہی ہے لیکن صوبے کا حکمران کہیں مائیک الٹا رہا ہے کہیں انگلیاں نچا رہا ہے۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ 80فیصد سے زیادہ لوگ زہریلا پانی پینے پر مجبور ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جہاں نوجوانوں کیلئے روزگار، بیماروں کیلئے علاج، بچوں کیلئے تعلیم، اور مظلوم کیلئے انصاف نہیں وہاں موٹروے اور پل مسائل کا حل نہیں، انہیں بہاولپور اور باقی صوبہ میں ہماری حکومت کی سڑکوں کی مرمت کرنے کی بھی توفیق نہیں ہوئی، ہمارے نوجوان بے روزگار ہیں اور ان کے برخوردار بھارت، چین اور ترکی میں ان کے ساتھ دیہاڑیاں لگاتے پھر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم 1122، یہ 420، ہم تعمیر کے سفیر یہ تخریب کا مافیا ہیں، ہم پورے پنجاب کو اپنا خاندان سمجھتے ہیں، ان کے نزدیک پورا پاکستان صرف ان کا خاندان ہے، یہ عوام دشمن، ہم عوام دوست ہیں۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ بہاولپور میں یہ انسانی سمندر اس بات کا ثبوت ہے کہ کس نے نیک نیتی سے ان کی خدمت کی تھی اور کس نے جعل سازی کے ذریعے ان کے جذبات سے فائدہ اٹھایا، یہی وجہ ہے کہ آج یہ جہاں جاتے ہیں ”گونوازگو“ اور ”گوشہبازگو“ کے نعرے ان کا پیچھا کرتے ہیں اور عوام ہمارا دور یاد کرتے ہیں۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ لوڈ شیڈنگ اور مہنگی بجلی سے عوام کی زندگی جہنم بن گئی ہے، دوسرا مسئلہ جو روز بروز سنگین تر ہوتا جا رہا ہے وہ چاروں صوبوں کی لاکھوں ایکڑ زمین ہے، جو پانی نہ ملنے سے صحرا کا منظر کا پیش کر رہی ہے، وہ ملک جس کے پاس دنیا کا بہترین نہری نظام موجود ہے، وہاں لوگ قحط سے مر رہے ہیں، سیلاب سے بچاﺅ کے علاوہ دونوں مسائل کا واحد حل کالا باغ ڈیم ہے جس سے نہ صرف یہ کہ 3600میگا واٹ بجلی مہیا ہو سکتی ہے، بلکہ آبپاشی کیلئے سندھ کو مزید 4ملین، خیبرپختونخواہ کو 2.2ملین، بلوچستان کو 1.5ملین اور پنجاب کو مزید 2ملین ایکڑ فٹ پانی مل سکتا ہے بلکہ عوام کو ڈھائی روپے فی یونٹ کے حساب سے 24گھنٹے بجلی بھی فراہم کی جا سکتی ہے، اس طرح پنجاب سے زیادہ فائدہ سندھ اور خیبرپختونخواہ کو ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم اس ڈیم کے ذریعہ ملک کی حالت بدلنے کیلئے قومی مفاد میں دوسرے صوبوں کے آگے ہاتھ جوڑنے کو تیار ہیں، ایک ایسے منصوبے کو اختلاف برائے اختلاف کی بھینٹ نہیں چڑھانا چاہئے جس سے پاکستان کا اور ہماری آئندہ نسلوں کا مستقبل وابستہ ہے اس پر تمام حاضرین نے ہاتھ اٹھا کر ان کی تائید کی۔ چودھری پرویزالٰہی نے کہا کہ بہاولپور کا صوبہ وقت آنے پر ضرور بنے گا، یہ اہل بہاولپور کے دل کی آواز ہے، اس پر سنجیدگی سے غور ہونا چاہئے، آج ثابت ہو گیا کہ پاکستان مسلم لیگ زندہ جماعت ہے، اور آج کا جلسہ مخالفانہ پروپیگنڈا کا منہ توڑ جواب ہے۔ چودھری پرویزالٰہی نے مزید کہا کہ ہمارا ویژن عام اور غریب آدمی تھا، ہمارے انقلابی اقدامات میں مفت تعلیم، علاج اور دوائیاں، 1122 سروس، کسانوں کیلئے بجلی کے بلوں میں سبسڈی، پانی ٹیل تک پہنچانا، مفت روزگار کے مواقع میں اضافہ، جرائم پر قابو پانے کیلئے مو¿ثر اقدامات کے علاوہ کسانوں، محنت کشوں کی فلاح کیلئے مختلف اقدامات شامل ہیں، ہم نے میٹرک تک تعلیم مفت کی، شہبازشریف کو چاہئے تھا کہ اسے بی اے تک لے جاتے، انہوں نے ہماری سہولتیں بھی چھین لیں۔ طارق بشیر چیمہ نے کہا کہ چودھری پرویزالٰہی نے جنوبی پنجاب باالخصوص بہاولپور کیلئے جو کچھ کیا وہ ناقابل فراموش ہے اور لوگ ہمارے دور کو یاد کرتے ہیں، آج کا یہ عظیم الشان جلسہ بہاولپور کے عوام کے اس عزم کا اظہار ہے کہ وہ پاکستان مسلم لیگ کو ایک بار پھر پنجاب میں حکمران دیکھنا چاہتے ہیں۔ جلسہ سے سنی اتحاد کونسل کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا اور ناصر شیرازی نے بھی خطاب کیا۔#

مزید :

صفحہ اول -