حکومت تحریک لبیک کے مطالبات کیلئے مذاکراتی وفد کو مکمل بااختیار بنائے،لیاقت بلوچ

حکومت تحریک لبیک کے مطالبات کیلئے مذاکراتی وفد کو مکمل بااختیار ...

لاہور ( لیڈی رپورٹر)جماعت اسلامی اور ملی یکجہتی کونسل پاکستان کے سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ نے اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہاہے کہ حکومت تحریک لبیک پاکستا ن کے مطالبات تسلیم کرے یا مذاکراتی وفد کو مکمل بااختیار بنائے ۔ انتخابی اصلاحات کی آڑ میں عقیدہ ختم نبوت کاتنازعہ پیدا کرنے کی وزارت قانون تنہا ذمہ دار ہے ۔ وزیر قانون معافی مانگ رہے ہیں ، غلطی تسلیم کر رہے ہیں تو پورے ملک میں اطمینان اور سکون پیدا کرنے کے لیے وزیراعظم وزیر قانون سے استعفیٰ لیں ، راولپنڈی ، اسلام آباد کے عوام کو ریلیف مل جائے گا ۔احتجاجی دھرنا کی موجودہ صورتحال پیدا کرنے کی ذمہ دار وفاقی وزارت داخلہ اور پنجاب حکومت ہے ۔ راجہ ظفر الحق کمیٹی کی رپورٹ بلاتاخیر منظر عام پر لائی جائے ۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ عوام مہنگائی ، بے روزگاری اور لاقانونیت سے تنگ آ گئے ہیں ۔ وزیر خزانہ اسحق ڈار کے خلاف فرد جرم عائد ہوئی ، عدالت سے مفرور ہیں ، ان کی جائیداد ضبط ہونے کے اقدامات ہورہے ہیں ، قومی معیشت کو ناقابل تلافی نقصان ہورہاہے اس کے باوجود ضد ، ہٹ دھرمی اور بے شرمی کی انتہا ہے کہ وزیر خزانہ کو بر طرف نہیں کیا جارہا ۔ لیاقت بلوچ نے سینئر صحافی احمد نورانی کی عیادت کی اور ان کی خیریت دریافت کی ۔

لیاقت بلوچ

مزید : میٹروپولیٹن 1