سرحد چیمبر اور افغان قونصل جنرل میں تجارتی فروغ کیلئے مشترکہ کوششوں پر اتفاق

سرحد چیمبر اور افغان قونصل جنرل میں تجارتی فروغ کیلئے مشترکہ کوششوں پر اتفاق

  

پشاور(این این آئی)سرحد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر زاہداللہ شنواری اور پشاور میں تعینات افغان قونصل جنرل معین مارسیال کے درمیان پاکستان اور افغانستان کے مابین باہمی تجارت اور افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کی راہ میں حائل رکاوٹوں کودونوں جانب کی حکومتوں کی سطح پراٹھانے ٗمشکلات کی نشاندہی کرنے اور ان کے حل کیلئے مشترکہ طور پرکوششیں کرنے پر اتفاق ہوا ہے جبکہ سرحد چیمبرکے صدر زاہداللہ شنواری نے افغان حکومت سے درخواست کی ہے کہ وہ پاکستانی تاجروں اور ایکسپورٹرز کی مشکلات کے ازالے کے لئے اقدامات اٹھائے ۔ اس مقصد کے لئے سرحد چیمبر افغان قونصلیٹ کے ساتھ ہر ممکن تعاون کے لئے تیار ہے ۔ تفصیلات کے مطابق سرحد چیمبر کے صدر زاہداللہ شنواری نے گذشتہ روز پشاور میں تعینات افغان قونصل جنرل معین مارسیال سے افغان قونصلیٹ پشاور میں ملاقات کی ۔ اس موقع پر افغان قونصلیٹ کے اعلیٰ حکام بھی موجود تھے ۔ سرحد چیمبر کے صدر زاہداللہ شنواری نے افغان قونصل جنرل کو بتایا کہ دونوں جانب کی حکومتوں کے مابین بعض مسائل کی وجہ سے باہمی تجارت اور افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کا عمل بری طرح متاثر ہو رہا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ سرحد چیمبر نے حکومت پاکستان کی جانب سے 731 آئٹمز پر عائد ریگولیٹری ڈیوٹی کا معاملہ اعلیٰ سطح پر اٹھایا ہے۔

اور اس سلسلے میں وزارت تجارت اور ایف بی آر سمیت متعلقہ اداروں کے ساتھ رابطہ کیاگیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے نئے معاہدہ کی وجہ سے پاکستان اور افغانستان کی بزنس کمیونٹی متاثر ہو رہی ہے اور اس حوالے سے بھی انہوں نے حکومت پاکستان کو اپنے تحفظات سے آگاہ کیا ہے ۔ زاہداللہ شنواری نے افغان قونصل جنرل سے کہا کہ پاکستان اور افغانستان کے مابین تجارت دونوں برادر اسلامی ممالک کے مفاد میں ہے اور تیزی سے کم ہوتا ہوا تجارتی حجم دونوں ملکوں کی بزنس کمیونٹی اور معیشت کے لئے نقصان دہ ثابت ہو رہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ سرحد چیمبر اپنے طور پر حکومت پاکستان کے سامنے مسائل اور مشکلات کی نشاندہی کر رہا ہے اور ان مسائل کے حل کے لئے اپنی سفارشات بھی حکومت کے سامنے پیش کر رہا ہے ۔ لہٰذا افغان قونصلیٹ بھی مسائل کی نشاندہی اور حل کے لئے افغان حکومت کے ساتھ معاملات اٹھائے تاکہ دونوں ممالک کے درمیان باہمی تجارت اور افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کیا جاسکے ۔زاہداللہ شنواری نے انہیں بتایا کہ سرحد چیمبر کا اعلیٰ سطحی وفد بہت جلدافغان سفیر سے اسلام آباد میں ملاقات کرے گا جس میں انہیں دونوں جانب کی بزنس کمیونٹی کو درپیش مسائل اور تحفظات سے آگاہ کیا جائے گا ۔ افغان قونصل جنرل معین مارسیال نے سرحد چیمبر کے صدر زاہداللہ شنواری کی سفارشات اور تحفظات سے اتفاق کیا اور انہیں یقین دلایا کہ وہ باہمی تجارت اور افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے حوالے سے بزنس کمیونٹی کے خدشات افغان حکومت تک پہنچائیں گے اور ان کے حل کیلئے اپنا موثر کردار ادا کریں گے۔ انہوں نے حکومت پاکستان کی جانب سے افغان ایکسپورٹرز کو درپیش بعض مسائل کا ذکربھی کیا اور سرحد چیمبر کے صدر زاہداللہ شنواری سے درخواست کی کہ وہ ان کے حل کیلئے حکومت اور متعلقہ اداروں سے رابطہ کریں۔

مزید :

کامرس -