یمن میں جنگ، بھوک اور بیماری سے رواں سال 50ہزار بچے جاں بحق

یمن میں جنگ، بھوک اور بیماری سے رواں سال 50ہزار بچے جاں بحق

نیویارک(این این آئی)اقوام متحدہ نے یمن کی صورتحال کو انسانی تاریخ کا بدترین بحران قرار دیتے ہوئے کہاہے کہ یمن کے محاصرے کی وجہ سے بھوک اور بیماریوں سے روزانہ 130بچوں موت کا شکار ہو رہے ہیں جبکہ آئندہ بھی بروقت علاج اورغذانہ ملی توچندماہ میں ڈیڑھ لاکھ یمنی بچے موت کا شکار ہوجائیں گے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق گزشتہ روز اقوام متحدہ کے ایک ترجمان نے جاری کیے گئے بیان میں کہاکہ یمن کے محاصرے کے باعث اس سال وہاں جنگ، بھوک اور بیماری کے باعث جاں بحق ہونے والے بچوں کی تعداد 50ہزار سے زائد ہوگئی ہے ۔ترجمان کے مطابق یمن کے محاصرے کی وجہ سے بھوک اور بیماریوں سے روزانہ 130بچوں موت کا شکار ہو رہے ہیں۔ایک کروڑ 10لاکھ بچوں سمیت 2کروڑ یمنی فوری امداد کے منتظر ہیں، جبکہ محاصرہ جزوی ختم ہونے کے باوجود32لاکھ یمنی بھوک کاشکارہوں گے۔بیان کے مطابق علاج اورغذانہ ملی توچندماہ میں ڈیڑھ لاکھ یمنی بچے موت کا شکار ہوجائیں گے۔

مزید : عالمی منظر