سینٹ کے اجلاس میں حافظ حمد اللہ اور رضا ربانی کے مابین شدید تلخی

سینٹ کے اجلاس میں حافظ حمد اللہ اور رضا ربانی کے مابین شدید تلخی

  

اسلام آباد(آن لائن) سینٹ اجلاس کے دوران جمعیت علماء اسلام کے سینیٹر حافظ حمد اللہ اور چیرمین سینٹ کے مابین شدید تلخ کلامی کے بعد سینیٹر حافظ حمد اللہ نے بات کرنے کی اجازت نہ ملنے پر احتجاجاً ایجنڈے کی کاپی پھاڑ دی اور ایوان سے باہر چلے گئے انہوں نے الزام عائد کیا کہ ایوان کو ایک سیاسی جماعت کے کہنے پر چلایا جا رہاہے جبکہ چیرمین سینٹ نے کہاکہ ایوان کو یرغمال بنانے کی اجازت نہیں دونگا۔ بدھ کے روز ایوان بالا کے اجلاس کے دوران اس وقت ماحول میں شدید گرمی پیدا ہوگئی جب حافظ حمد اللہ نے چیرمین سینٹ نے انتخابی اصلاحات ترمیمی بل پر بات کرنے کی اجازت طلب کی تاہم چیرمین سینٹ کی جانب سے اجازت نہ ملنے پر سینیٹر حافظ حمد اللہ برہم ہوگئے اور بغیر مائیک تقریر شروع کر دی جس پر چیرمین سینٹ نے ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے انہیں بیٹھ جانے کی ہدایت کی مگر حافظ حمد اللہ نے بیٹھنے سے انکار کر تے ہوئے اپنی تقریر جاری رکھی اس دوران چیرمین سینیٹ بار بار انہیں بیٹھنے کی ہدایت کر تے رہے اور کہاکہ مجبور نہ کیا جائے ۔

مزید :

صفحہ آخر -