پاک امریکا تعلقات میں توانائی کے شعبے میں تعاون کرنے پر اتفاق

پاک امریکا تعلقات میں توانائی کے شعبے میں تعاون کرنے پر اتفاق

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ کے انٹرنیشنل ڈویلپمنٹ (یو ایس ڈی) نے گزشتہ روز توانائی کے تحفظپر منعقد ہونے والی عالمی کانفرنس میں توانائی کے شعبے میں پاکستان کے ساتھ اپنی شراکت داری کا اظہار کیا۔ اے پی پی کے صوبائی ڈائریکٹر پنجاب لی سوانسن، وائس چانسلر یونیورسٹی آف انجنیئرنگ اینڈ ٹیکنیکس، ڈاکٹر فضل احمد خالد، سی ای او لاہور علمی پارک ڈاکٹر زبیر اقبال غوری اور گورنمنٹ اکیڈمی اور نجی شعبے سے کثیر لوگوں نے شرکت کی ۔ یو ای ٹی کی طرف سے میزبانی کی گئی، کانفرنس اور اس ایکسپو نمائش میں پاک امریکا تعلقات میں اعلی درجے کیتعلیم کی جانب سے تعاون کییقین دہانی کرائی گئی۔افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے محترمہ سوسن نے کہا کہ امریکہ توانائی کی بڑھتی ہوئی ضروریات کو پورا کرنے میں مدد کے لئے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتا ہے۔ہم پاکستان کے بنیادی ڈھانچے اورپیشہ وارانہ امور میں بہتری کی حمایت کر رہے ہیں اور توانائی کے شعبے کے کام کو مزید موثر اور برقرار رکھنے میں مدد کے لئے پالیسی کے اصلاحات کو فروغ دینیکے لئے کوشاں ہیں۔پاکستان میں توانائی کے چیلنجوں کے لئے جدید اور عملی حل ڈھونڈنے کے لئے پاکستان سینٹر برائے اعلی درجے کے مطالعہ کو لاگو کیا گیا ہے۔کانفرنس کے شرکا نے انجینئرز، محققین، توانائی کے ماہرین، مینوفیکچرز اور تعمیراتی ڈیزائنرز کو ایک دوسرے کے ساتھ توانائی کی کارکردگی اور تحفظ کی حکمت عملی کے میدان میں تبادلہ خیالات پیش کرنے کے لئے ایک موقع فراہم کیا۔یو ایس پی کے زیر اہتمام یو ایس پی سی اے اے اے نیشنل یونیورسٹی آف سائنسز اور ٹیکنالوجی (نسٹ) یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی، پشاور اور ایریزونا اسٹیٹ یونیورسٹی کے درمیان ایک مشترکہ پہلو پر پاکستان کے ماہرین کی تعمیر پر توجہ مرکوز کی گئی ہے۔ پروگرام کے آخر میں توانائی کے موضوع پر 200 گریجویٹ طالب علموں اور فیکلٹی کے ارکان کو ایریزونا اسٹیٹ یونیورسٹی میں 2019 تک توانائی پر تعاون فراہم کرنے کا اعادہ کیاگیا ۔

ایکسپو نمائش

مزید :

علاقائی -