170ارب روپے کے ترقیاتی کام جاری ، گوادر عالمی تجارت کا مرکز بنے گا : وزیر اعظم

170ارب روپے کے ترقیاتی کام جاری ، گوادر عالمی تجارت کا مرکز بنے گا : وزیر اعظم

  

گوادر (مانیٹرنگ ڈیسک،آئی این پی،این این آئی) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ ایسٹ بے ایکسپریس وے منصوبہ سابق وزیراعظم نواز شریف اور چینی وزیراعظم کے وژن کا عکاس، ایسٹ بے ایکسپریس منصوبہ پاکستان اور چین کی لازوال دوستی کا ثبوت ہے، ایسٹ بے ایکسپریس وے سے گوادر بندرگاہ مکران کوسٹل ہائی وے سے منسلک ہو گا، بنیادی ڈھانچے کے یہ منصوبے گوادر کی ترقی میں اہم کردار ادا کریں گے، آئندہ چند ہفتوں میں گوادر کے مسائل حل سے متعلق ثمرات نظر آئیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ایسٹ بے ایکسپریس وے کے سنگ بنیاد کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر وزیر داخلہ احسن اقبال‘ وفاقی وزیر میری ٹائم افیئرز میر حاصل بزنجو، گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی، چینی سفارتکار یانگ ینگ، وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اﷲ زہری، وفاقی وزیر سیفران عبدالقادر بلوچ، وزیر مملکت پٹرولیم جام کمال خان، وزیر مملکت میری ٹائم افیئرز جعفر اقبال، کمانڈر سدرن کمانڈر لیفٹیننٹ جنرل عاصم باجوہ، چینی کنسٹرکشن کمپنی کے حکام اور دیگر اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔وزیراعظم نے کہا کہ ایسٹ بے ایکسپریس وے منصوبہ پاکستان چین کی لازوال دوستی کا ثبوت ہے، گوادر بندرگاہ کی ترقی دوطرفہ تعاون کی بہترین مثال ہے، سی پیک دونوں ملکوں کی دوستی کو نئی جہت دے گی، سی پیک مشترکہ خوشحالی کا وژن ہے، منصوبہ سابق وزیراعظم نواز شریف اور چینی وزیراعظم کے وژن کا عکاس ہے، ایسٹ بے ایکسپریس وے سے گوادر بندرگاہ مکران کوسٹل ہائی وے سے منسلک ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ گوادر میں فری اقتصادی زون اسی سال مکمل ہو گا، گوادر میں ووکیشنل سینٹر اور ہسپتال پر کام ہو رہا ہے، گوادر میں ہوائی اڈے کا سنگ بنیاد جلد رکھا جائے گا، گوادر میں بجلی گھر کی تعمیر بھی جلد شروع ہو گی، گوادر میں 170ارب روپے کے ترقیاتی کام ہورہے ہیں، بنیادی ڈھانچے کے یہ منصوبے گوادر کی ترقی میں اہم کردار ادا کریں گے، منصوبوں سے گوادر عالمی تجارت کا مرکز بنے گا، گوادر میں بجلی اور پانی کے مسائل حل کرنے کیلئے کام کر رہے ہیں، آئندہ چند ہفتوں میں گوادر کے مسائل کے حل سے متعلق ثمرات نظر آئیں گے، گوادر کی پاک ایران سرحد تک رسائی کیلئے وزیر داخلہ کو اقدامات کی ہدایت کی ہے، مقامی لوگوں کو روزگار اور ترقی کے مواقع یقینی بنانے چاہئیں۔وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت محض باتوں پر نہیں عملی اقدامات پر یقین رکھتی ہے، سی پیک سے پاکستان میں بے پناہ ترقی ہوگی ،منصوبے سے پاک چین تعلقات کو نئی جہت ملی ہے، ترقی و خوشحالی کے منصوبوں سے گوادر مچھیروں کے چھوٹے سے قصبہ سے عالمی اہمیت کا حامل شہر بن جائے گا۔ وزیراعظم نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گوادر میں ترقی کا ایک اور منصوبہ دونوں ممالک کے درمیان بے مثال دوستی اور تعلقات کا ایک اور مظہر ہے، پاکستان اور چین کے درمیان 70 سال کی آزمودہ دوستی ہے اور گوادر کی ترقی پاکستان اور چین کے درمیان تعاون اور دوستی کی مضبوط مثال ہے۔ وزیراعظم نے منصوبہ میں چینی کمیونیکیشن کارپوریشن، چائنہ اوورسیز بورڈ ہولڈ کمپنی اور گوادر ڈویلپمنٹ اتھارٹی کا خصوصی شکریہ ادا کیا جنہوں نے 15 ارب روپے کا یہ منصوبہ شروع کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گوادر میں بجلی اور پانی کے مسائل گورنر اور وزیراعلیٰ نے اٹھائے ہیں، ان دونوں مسائل پر کام جاری ہے اور اگلے چند ہفتوں میں اس کے ثمرات سامنے آئیں گے ۔ وزیراعظم نے گورنر اور وزیراعلیٰ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ گوادر کی ترقی اور خوشحالی کے منصوبوں میں مقامی آبادی کا ضرور خیال رکھا جائے، ان منصوبوں سے نہ صرف گوادر بلکہ پورے پاکستان کو فوائد ملیں گے، ہماری خواہش اور کوشش ہے کہ ان منصوبوں میں مقامی لوگوں کو زیادہ سے زیادہ روزگار اور تربیت کے مواقع فراہم ہوں۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) کی حکومت صرف باتیں نہیں بلکہ کام کرتی ہے، چند دن قبل ہم نے کراچی میں ایل این جی ٹرمینل اور اس سے قبل ساہیوال میں پاور پلانٹ کا افتتاح کیا تھا، اگلے ہفتے سی پیک کے تحت پورٹ قاسم پر توانائی کے منصوبہ کا افتتاح ہو گا۔وزیراعظم نے پاک۔چین اقتصادی راہداری کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہ کسی صوبے کا علاقہ کا نہیں بلکہ پورے پاکستان کا منصوبہ ہے، سی پیک پاکستان اور چین کا مشترکہ وژن ہے جو پاکستان کو مستقبل میں بے پناہ ترقی سے ہمکنار کرے گا، یہ ترقی کا ایک سلسلہ ہے، مجھے بہت خوشی ہو رہی ہے کہ تمام صوبے اور تمام سیاسی جماعتیں اس منصوبہ کی حمایت کر رہی ہیں، جب یہ منصوبہ شروع ہو رہا تھا تو اس پر بعض تحفظات تھے لیکن گذشتہ تین برسوں میں ہم نے تمام تر تحفظات کا ازالہ کر دیا ہے، اس ضمن میں سابق وزیراعظم محمد نواز شریف اور وزیر داخلہ احسن اقبال کی کوششیں قابل تعریف ہیں۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان ایک فعال جمہوریت ہے اور اختلاف رائے جمہوریت کا حسن ہے لیکن الحمد اﷲ سی پیک پر پورا پاکستان متحد ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ ایسٹ بے ایکسپریس وے اور گوادر کی ترقی و خوشحالی کے دیگر منصوبے بروقت مکمل ہوں گے۔

وزیراعظم

گوادر (این این آئی)وفاقی وزیر برائے ترقی و منصوبہ بندی اور وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ گوادر کو سنگاپور اور ہانگ کانگ جیسا پورٹ سٹی بنایا جائے گا، گوادر کا بجلی اور پانی کا مسئلہ چند ماہ میں ہنگامی بنیادوں پر حل کر لیں گے۔وہ گزشتہ روز گوادر پورٹ میں ایسٹ بے ایکسپریس وے آف گوادر پورٹ کا سنگ بنیاد رکھنے کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کررہے تھے۔وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا کہ سی پیک کے قیام سے گوادر سمیت ملک بھر میں خوشحالی آئے گی اور مقامی لوگوں کو روزگار ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ چین پاکستان کا مخلص دوست ہے کیونکہ چین نے پاکستان کا اس وقت ساتھ دیا جب کوئی اور ساتھ دینے کے لئے تیار نہیں تھا۔ وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ ہمیں 2013 ء کا پاکستان نہیں بھولنا چاہئے ،20 سے 22گھنٹے کی لوڈشیڈنگ تھی، امن وامان کی صوتحال بھی بہتر نہ تھی لیکن آج مقامی لوگ گوادر کی ترقی سے مطمئن ہیں۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چین کے سفیر نے کہا کہ پاکستان اور چین قریبی دوست ہیں اور دونوں ملکوں کی یہ دوستی ہمیشہ قائم رہے گی۔ انہوں نے گوادر پورٹ اور سی پیک پاکستان کو پوری دنیا سے منسلک کر دے گا۔وفاقی وزیر برائے پورٹ اینڈ شپنگ میر حاصل خان بزنجو نے گوادرپورٹ کو پورے پاکستان سے ملانے کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنے پر وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ گودار پورٹ کی تعمیر سابق وزیراعظم محمد نوازشریف کا وژن تھا۔ انہوں نے کہا کہ ایکسپریس وے گوادر پورٹ کو نہ صرف پاکستان کے دیگر حصوں سے بلکہ دنیا سے منسلک کردے گا۔میر حاصل خان بزنجو نے کہا کہ 40 سال قبل لوگ کہتے تھے کہ سنگا پور پورٹ گیم چینجر ہے اور پھر اس کے بعد دبئی پورٹ کے لئے بھی ایسا ہی کہا گیا لیکن اب دنیا گوادر کو گیم چینجر کہتی ہے۔

احسن اقبال/چینی سفیر

مزید :

صفحہ اول -