85 سالہ بزرگ چوکیدار، 6 مہینے اور 6 چھوٹی بچیاں، سکول سے ایسی خبر آگئی کہ انسانیت لرز کر رہ گئی، والدین کی پریشانی کی حد نہ رہی

85 سالہ بزرگ چوکیدار، 6 مہینے اور 6 چھوٹی بچیاں، سکول سے ایسی خبر آگئی کہ ...
85 سالہ بزرگ چوکیدار، 6 مہینے اور 6 چھوٹی بچیاں، سکول سے ایسی خبر آگئی کہ انسانیت لرز کر رہ گئی، والدین کی پریشانی کی حد نہ رہی

  

نئی دلی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی شہر حیدر آباد میں ریلوے کے سابق ملازم اور ایک سکول کے 85 سالہ چوکیدار کو 12 سالہ بچی کے ساتھ زیادتی کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ ملزم ستیا نارائنا کی جانب سے کم عمر بچی کے ساتھ زیادتی کا یہ پہلا واقعہ نہیں ہے بلکہ وہ عادی مجرم ہے جس نے پہلے بھی اسی سکول کی تین بچیوں کو زیادتی کا نشانہ بنایا جبکہ متعدد بچیوں کو وہ ہراساں بھی کرتا رہا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ستیانارائنا کی جنسی درندگی اس وقت سامنے آئی جب ’ شی ٹیم‘ مختلف سکولوں اور کالجز میں جنسی ہراسگی کے حوالے سے آگہی پھیلانے کیلئے حیدر آباد گئی۔ ستیا نارائنا کی زیادتی کا نشانہ بننے والی ساتویں کلاس کی طالبہ کے والدین نے ’ شی ٹیم‘ کو بچی کے ساتھ زیادتی سے آگاہ کیا۔ جب اس معاملے کی تحقیقات کی گئیں تو پتہ چلا کہ ملزم 6 بچیوں کو ہراساں کرتا رہا ہے جن میں سے تین کے ساتھ اس نے زیادتی بھی کی ہے، 85 سالہ اس جنسی بھیڑیے کی جنسی درندگی کا نشانہ بننے والی تمام طالبات کی عمریں 12 سال سے کم ہیں، ملزم بچیوں کو چاکلیٹس اور ٹافیاں دے کر بہلاتا اور جب بچوں کا اعتماد جیت لیتا تواپنے گھر لے جا اپنا گھناﺅنا روپ دکھاتا تھا۔

ملزم ستیانارائنا گزشتہ 6 ماہ سے بچیوں کے ساتھ زیادتی کر رہا تھا لیکن کسی بچی کے والدین کی طرف سے شکایت درج نہیں کرائی گئی ، ایک شکایت سامنے آنے کے بعد باقی والدین بھی آگے آئے اور ملزم کے خلاف مقدمات درج کرائے ہیں۔

مزید :

جرم و انصاف -