نیشنل انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ میں 28ویں مڈکیریئرمینجمنٹ کورس کاانعقاد

  نیشنل انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ میں 28ویں مڈکیریئرمینجمنٹ کورس کاانعقاد

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)نیشنل انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ میں 28ویں مڈکیریئرمینجمنٹ کورس کاانعقادکیاگیاجس میں پاکستان بھرکے مختلف محکموں سے44افسران نے حصہ لیا۔اس موقع پرچیف سیکرٹری خیبرپختونخواڈاکٹرکاظم نیازنے بحیثیت مہمان خصوصی اور ڈائریکٹرجنرل نیشنل انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ فرح حامدنے کورس سے فارغ التحصیل ہونیوالے افسران میں سرٹیفکیٹس بھی تقسیم کیں۔کورس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے چیف سیکرٹری خیبرپختونخواڈاکٹرکاظم نیازنے کہاکہ دنیا تیزی سے بدل رہی ہے اور ان تبدیلیوں میں انہی کورسزکی تکنیک اورمہارتوں کوبروئے کارلاناہے،ان کورسزمیں سیکھے گئے مہارتوں کوعوام کی خدمت میں بھرپوراستعمال کرنے کیلئے کوئی دقیقہ فروگذاشت نہ کیاجائے۔انہوں نے کہاکہ سرکاری ملازمین عوامی خدمت کی فراہمی میں سرفہرست ہیں لہٰذاایک بہترتربیت یافتہ انسانی وسائل کی اشدضرورت ہے جوعوام کی سماجی معاشی ترقی میں کلیدی کرداراداکرے،پالیسی بنانے والے بیورکریسی کی تربیت کی اہمیت اورضرورت کوسمجھتے ہیں،سرکاری ملازمین کی صلاحیتوں میں اضافے پرنئی توجہ مرکوزہے۔انہوں نے کورس کے شرکاء پر زور دیتے ہوئے کہاکہ وہ قائد ملت محمدعلی جناحؒ کے وژن کی پیروی کریں اورسیاست اورسیاسی وابستگی سے بالاتررہیں،ایک ترقی پسند ملک اور متمول قوم کیلئے سرکاری ملازمین کومنصفانہ شفافیت،میرٹ اورجمہوریت کے اصولوں پرعمل پیراہوناپڑے گا۔ڈائریکٹرجنرل نیشنل انسٹیٹیوٹ آف مینجمنٹ پشاورفرح حامدنے کورس کے اغراض ومقاصدپرروشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ 44افسروں کایہ دستہ مختلف سرکاری محکموں کی نمائندگی کرتاہے،مڈکیریئرمینجمنٹ کورس گریڈ18سے گریڈ19میں ترقی پانے والے افسروں کیلئے ایک لازمی کورس ہے۔انہوں نے آگاہ کرتے ہوئے کہاکہ اس کورس میں 6ماڈیولزہیں جن میں مہارتوں کی نشوونما،شواہدپرمبنی فیصلہ سازی،انفارمیشن ٹیکنالوجی کی مہارت اورطرز عمل میں تبدیلیوں پرتوجہ دی گئی ہے،کورس کے دوران ذراعت اورصنعتی ترقی سے متعلق کیسز کامطالعہ کیا،نقلی مشقیں،کاغذات کاتجزیہ،لیکچرڈسکشن،پینل ڈسکشن،ٹیوٹوریل ڈسکشن،ورکشاپس،مختلف سرکاری محکموں کے فیلڈوزٹس اور ضلع چترال اورفیصلہ آبادکاان لینڈسٹڈی دورہ بھی کیا۔انہوں نے کہاکہ سرکاری ملازمین عوام کے خادم ہیں اورانہیں اللہ تعالیٰ اورعوام کے سامنے دیانتداری اوراحساس احتساب کیساتھ عوام کی خدمت کرنی چاہئے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر