معلومات تک رسائی قانون سے استفادہ حاصل کرنے کیلئے نوجوانوں کو آگے آنا ہوگا،عارف شاہ

معلومات تک رسائی قانون سے استفادہ حاصل کرنے کیلئے نوجوانوں کو آگے آنا ...

  



صوابی(نمائندہ خصوصی) معلومات تک رسائی قانون مجریہ2013 اور آرٹی ایس 2014سے استفادہ حاصل کرنے کیلئے یوتھ کو آگے آنا ہوگا مکمل اور تصدیق شدہ معلومات کی بدولت اداروں کے بارے شفافیت کو یقینی بنایا جاسکتا ہے ان خیالات کا اظہار سی پی ڈی آئی، ایف این ایف کے تعاون سے سماجی بہبود رابطہ کونسل صوابی کے زیر اہتمام مقامی کالج میں ایک روزہ آرٹی آئی سیمنار سے سید عارف شاہ،سید جمال شاہ، فاطمہ گل، روح الامین نے الگ الگ خطاب میں کیا اس موقع پر تقریب کی صدارت پرنسپل صوابی پولی ٹیکنیک انسٹی ٹیو ٹ روح الامین نے کی سیمنار سے ڈسٹرکٹ آفیسر سوشل ویلفیئر سید جمال شاہ،ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسر آرٹی آیس فاطمہ گل، سماجی بہبود رابطہ کونسل صوابی کے جنرل سیکریٹری سید عارف شاہ، سرپرست اعلیٰ روح الامین،پرنسپلصوابی پولی ٹیکنیک انسٹی ٹیو ٹ روح الامین،انجمن تاجران مردان روڈ صدر و سماجی کارکن امتیاز خان، الخیر ویلفیئر آرگنائزیشن کے جنرل سیکرٹری شیر افسر خان، نعیم خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ معلومات تک رسائی قانون مجریہ 2013(RTI (اور ر آرٹی ایس 2014نے صوبہ میں نافذ العمل ہے لیکن عوام کو قانون کے بارے میں زیادہ معلومات نہ ہونے کی وجہ سے ان سے کم لوگ استفادہ حاصل کررہے ہیں نوجوان آگے آئے اور قانون کا عملی اطلاق ممکن بنانے کیلئے سرکاری اداروں سے معلومات حاصل کرنے کیلئے سادہ کاغذ پر درخواستیں جمع کریں صوبہ کے تما سرکاری اداروں کے اندر پبلک انفارمیشن آفیسر موجود ہیں درخواست پر متعلقہ معلومات 10دن اور بعض اوقات میں 20دن کے اندر درخواست گزار کو دینیکے پابند ہیں اگر پھر بھی معلومات نہ دیں تو اس کے خلاف آر ٹی آئی کمیشن کو درخواست دی جا سکتی ہے اور کمیشن کو اختیار حاصل ہے کہ پی آئی او کو زاتی جرمانہ اور دیگر سزاء دے اسی طر ح شہری سہولیات کیلئے بنائے گئے قانون ر آرٹی ایس 2014 جو کہ وقت کی تعین کرتا ہے اور مختلف نوعیت پبلک سروسز سے متعلق رجوع کیا جاسکتا ہے اس موقع پر کالج سٹوڈنٹ نے متعدد سوالات کئے اور بعد ازاں مختلف دفاتر سے متعلق 20کے قریب آرٹی آئی مجریہ 2013کے تخت درخواستیں جمع کرنے کیلئے تحریر کئے آخر میں ایس بی آر سی کی طرف سے پرنسپلصوابی پولی ٹیکنیک انسٹی ٹیوٹ صوابی روح الامین، سوشل ویلفیئر آفسیر اور ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسر آر ٹی آیس فاطمہ گل کو خصوصی شیلڈز دئے گئے

مزید : پشاورصفحہ آخر