ضمانت قبل از گرفتاری کیلئے درخواست دینے والا ملزم گرفتار

  ضمانت قبل از گرفتاری کیلئے درخواست دینے والا ملزم گرفتار

  



نوشہرہ (بیورورپورٹ)نوشہرہ کی مقامی عدالت میں ضمانت قبل از گرفتاری کیلئے درخواست دائر کرنے کیلئے آئے ہوئے ملزم کو جلوزئی پولیس نے نوشہرہ کے ممتاز قانون دان، سابق ڈپٹی اٹارنی جنرل میاں ارشد جان ایڈوکیٹ کے چیمبر سے حراست میں لیکر پہلے نوشہرہ کینٹ پولیس اور بعدازں جلوزئی پولیس کے حوالے کر دیا نوشہرہ پولیس کے اس روئیے پر نوشہرہ ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کا ہڑتال عدالتوں میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ نوشہرہ کے وکلاء کا آئندہ کیلئے پولیس رویئے پر لائحہ عمل تشکیل دینے کیلئے اہم اور مشاورتی اجلاس طلب تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز نوشہرہ کے علاقہ جلوزئی کے رہائشی ظفر جو کہ جلوزئی پولیس کو دفعہ 109اور 324سمیت 3ایم پی او میں مطلوب تھا اوراسی روز وہ اپنے وکیل نوشہرہ کے ممتاز قانون دان سابق ڈپٹی اٹارنی جنرل میاں ارشد جان ایڈوکیٹ کے زریعے ضمانت قبل از گرفتاری کیلئے درخواست دائر کرنے کی غرض سے ان کے چیمبر واقع ڈسٹرکٹ کورٹس نوشہرہ میں موجود تھے کہ اس دوران جلوزئی پولیس نے میاں ارشد جان ایڈوکیٹ کے چیمبر میں داخل ہو کر ظفر نامی شخص کو حراست میں لیکر تھانہ نوشہرہ کینٹ پولیس کے حوالے کر دیا اور بعدازں ان کو دوبارہ جلوزئی پولیس کے حوالے کرکے تھانہ جلوزئی لے جایا گیا نوشہرہ پولیس کے اس روئیے پر نوشہرہ بھر کے وکلاء سراپا احتجاج بن گئے ہیں اور نوشہرہ ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن نے ہڑتال کا اعلان کرکے عدالتوں میں پیش نہ ہونے کا فیصلہ کردیا ہے جبکہ آئیندہ کیلئے نوشہرہ پولیس روئیے کے خلاف لائحہ عمل تشکیل دینے کیلئے ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر سید سجاد علی شاہ کاکا خیل کی صدارت میں اہم اور مشاورتی اجلاس طلب کردیا گیا ہے جس میں اہم فیصلے ہونے متوقع ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر