جنوبی کوریا کے مذہبی پیشواؤں کے وفد کا مردان میں بدھ مت کے تاریخی مقام کا دورہ

  جنوبی کوریا کے مذہبی پیشواؤں کے وفد کا مردان میں بدھ مت کے تاریخی مقام کا ...

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)جنوبی کوریا کے بدھ جوگی سلسلے کے ممتاز رہنما وان ہینگ نے بدھ مت کے دیگر مذہبی پیشواؤں کے ہمراہ گزشتہ روز تخت بھائی میں موجود بدھ مت کے مقدس مقامات کا دورہ کیا۔وفد میں 8 خواتین سمیت بدھ مت کے 45 مذہبی پیشوا شامل تھے مذہبی پیشواوں کی وفد نے ممتاز رہنما وان ہنگ کی سربراہی میں تخت بھائی میں موجود بدھ مت کے 2000 سال سے زائد تاریخی مقدس مقام پر اپنے عبادت کی اور اپنے مذہبی رسومات ادا کی۔ تخت بھائی آثار قدیمہ ورلڈ ہیریٹج کی فہرست میں بھی شامل ہے۔بدھ مت کے مذہبی پیشواوں نے صوبے میں بدھ مت کے مقامات کو محفوظ بنانے پر خیبر پختون خوا حکومت کا شکریہ ادا کیا۔مذہبی پیشواؤں کی وفد نے کل خان پور کے مقام بھمالہ پر موجود بدھ مت کے مقدس مقام کا دورہ بھی کیا تھا۔ممتاز بدھ جوگی راہنما وان ہینگ نے اپنے مذہبی رسومات ادا کرنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تخت بھائی کے 2000 سال سے زائد تاریخ رکھنے والے یہ مقام بدھ مت کے لئے انتہائی مقدس ہے،بدھ مت کے مقدس مقامات کو محفوظ بنانے پر خیبر پختون خوا حکومت اور محکمہ آثار قدیمہ کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں، مقدس مقامات کو محفوظ کرنا بین المذاہب ہم آہنگی کی اعلی مثال ہے،سینئر وزیر برائے ارکیالوجی و سیاحت عاطف خان نے راہبوں کی وفد کے لئے اپنی رہائش گاہ پر ظہرانے کا انتظام کیا تھا ظہرانے کے بعد سینئر وزیر نے بدھ مت کے مذہبی پیشواؤں کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ خیبر پختون خوا حکومت نے بدھ مت کے مقدس مقامات سمیت صوبے میں موجود دیگر ارکیالوجیکل سائٹس کو محفوظ بنانے اور ترقی دینے کے لئے ایک ارب روپے مختص کئے ہیں جو مذہبی ہم آہنگی کو فروغ دینے کی اعلی مثال ہے۔مذہبی سیاحت سے بین المذاہب ہم آہنگی کو فروغ دینے سمیت خطے سے بے روزگاری کا خاتمہ کیا جاسکتا ہے،یہی وجہ ہے کہ حکومت سیاحت کو فروغ دینے پر خطیر رقم خرچ کررہی ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر