نعت شریف

نعت شریف

  



انؐ کو، دل میں بٹھا لیا ہم نے

درد و غم کو، بھلا لیا ہم نے

سر کو، در پر جھکا لیا ہم نے

اپنا رتبہ بڑھا لیا ہم نے

مصطفیؐ سے، لگا کے لَو ہم نے

اپنا ایماں، بچا لیا ہم نے

اب کسی کی، ہمیں ضرورت کیا؟

انؐ کو اپنا بنا لیا ہم نے

انؐ کے میلاد کا مہینہ ہے

گھر کا گھر ہی سجا لیا ہم نے

مصطفیٰؐ کے حسیں وسیلے سے

دل خدا سے، ملا لیا ہم نے

جب پریشاں کیا، زمانے نے

حال انؐ کو، سنا لیا ہم نے

انؐ کے نقشِ قدم کو، چوما ہے

اپنی منزل کو، پا لیا ہم نے

ایسے کھوئے، نبیؐ کی یادوں میں

دل، مدینہ بنا لیا ہم نے

جب سے بھٹکے ہیں، انؐ کی راہوں میں

ہاتھ، جگ سے اٹھا لیا ہم نے

آئیں، جتنی مصیبتیں آئیں

انؐ کو مرشد بنا لیا ہم نے

بزم نعت رسولؐ میں یارو

”رنگ اپنا جما لیا ہم نے“

دل لگا کر، نبیؐ کی ہستی سے

ہر الم کو مٹا لیا ہم نے

کرکے یادوں کے دیپ کو روشن

غم ترے کو، سجا لیا ہم نے

عشق احمدؐسے، ساری دنیا میں

اپنا سکہ بٹھا لیا ہم نے

کوئی خطرہ نہیں، مظالم کا

انؐ کا پرچم، اٹھا لیا ہم نے

شاد! چل کر رہ محمدؐ پر

بادشہ کو، جھکا لیا ہم نے

اس قدر وہ، بڑے سخی ہیں شاد!

کہ طلب سے سوا، لیا ہم نے

مزید : ایڈیشن 1