سموگ سے لاہور کے ہر باسی کو خطرہ،فوری ایکشن لیا جائے:ایمنسٹی انٹرنیشنل

سموگ سے لاہور کے ہر باسی کو خطرہ،فوری ایکشن لیا جائے:ایمنسٹی انٹرنیشنل

  



لاہور،لندن (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں)ایمنسٹی انٹرنیشنل نے لاہور میں خطرناک سموگ پر 'فوری ایکشن' کی وارننگ جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ فضا کے خراب معیار کی وجہ سے ہر شہری کی صحت کو خطرہ ہے۔لاہور جمعہ کو مسلسل دوسرے روز دنیا کے آلودہ ترین شہروں کی فہرست میں اول نمبر پر رہا اور صبح 8 بجے کے قریب ایئرویڑول کی جانب سے ریکارڈ کیا گیا شہر کی فضا کا معیار 385 پر موجود تھا، جو صحت کے لیے 'مضر' ہے۔اسی اسموگ کی وجہ سے پنجاب حکومت کو ایک ماہ میں تیسری مرتبہ اسکولز بند کرنے کا اعلان کیا اور 'گہری اسموگ' کی وجہ سے جمعے کو لاہور، فیصل آباد اور گوجرانوالا اضلاع میں اسکول بند رہے۔ایمنسٹی انٹرنیشنل میں جنوبی ایشیا کی مہم چلانے والی رمل محی الدین کا کہنا تھا کہ 'لاہور میں اسموگ کے حوالے سے حکومت کے ناکافی ردعمل نے انسانی حقوق کے اہم خدشات کو بڑھا دیا، خطرناک ہوا ہر کسی کے صحت کے حق کو خطرے میں ڈال رہی ہے'۔انہوں نے کہا کہ 'یہ ایک سنجیدہ معاملہ ہے اور ہم دنیا بھر میں اپنے اراکین کو کہہ رہے ہیں کہ وہ پاکستانی انتظامیہ کو لکھے اور انہیں بتائے کہ اس بحران کو روکیں اور فوری طو پر ایکشن لیں تاکہ لوگوں کی صحت اور زندگیوں کا تحفظ ہوسکے'۔واضح رہے کہ 'فوری ایکشن' ایک مہم کا وہ طریقہ ہے جو ایمنسٹی انٹرنیشنل انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے متاثرین اور قیدیوں کے لیے بین الاقوامی سطح پر استعمال کرتی ہے۔ایمنسٹی انٹرنیشنل نے لاہورمیں سموگ سے نمٹنے کیلئے پاکستان سے فوری ایکشن لینے کا مطالبہ کر دیا ہے۔

سموگ 

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) سموگ کی روک تھام کیلئے کمشنر لاہور ڈویڑن آصف بلال لودھی نے مصنوعی بارش کے حوالے سے سمری سیکریٹری فنانس کو بھجوا دی۔شہر میں مصنوعی بارش کرنے پر 35کروڑ روپے خرچ کا تخمینہ بھجوایا گیا ہے۔کمشنر لاہور ڈویڑن آصف بلال لودھی کا کہنا ہے سیکر ٹری خزانہ کو سمری بھجوا دی ہے، راکٹ فائر کے ذریعے کلاؤڈ سیڈنگ کا عمل وزیر اعلیٰ پنجاب کی اجازت سے مشروط ہے۔اگر اجازت مل گئی تو شہر کے سموگ زدہ مختلف علاقوں میں مصنوعی بارش کروائی جائے گی، محکمہ موسمیات اور محکمہ ماحولیات کے احکامات پر بادل بنانے کیلئے راکٹ فائر کئے جائیں گے۔کنسلٹنسی کے لئے دبئی اور چین سے بات چل رہی ہے ورکنگ پیپر اور پی سی ون کی تیاری وزیر اعلیٰ کی اجازت کے بعد شروع کر دی جائے گی۔ آنیوالے سالوں میں سموگ کم نہیں بلکہ زیادہ شدت اختیار کرے گی۔ کمشنر لاہور کا کہنا ہے کہ محکمہ ماحولیات کو کلاؤڈ سیڈنگ کی طرف آنا ہو گا، تاکہ شہری اس پریشانی سے بچ سکیں۔

مصنوعی بارش

مزید : صفحہ اول