چودھری شوگر ملز ریفرنس،نواز شریف اور مریم کو حاضری سے استثنا

چودھری شوگر ملز ریفرنس،نواز شریف اور مریم کو حاضری سے استثنا

  



لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت کے جج چودھری امیر محمد خان نے مریم نواز کو ان کے خلاف چودھری شوگرملز ریفرنس دائر ہونے تک عدالت میں حاضری سے استثنیٰ دیدیا،عدالت نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی درخواست پرانہیں بھی 4 ہفتوں کیلئے حاضری سے مستثنیٰ قراردے دیا۔گزشتہ روز چودھری شوگر ملز کیس میں مریم نواز کے چچازاد بھائی یوسف عباس کو جیل حکام نے احتساب عدالت میں پیش کیاجبکہ مریم نواز ضمانت پرہونے کی وجہ سے خود عدالت میں پیش ہوئیں،انہوں نے اپنے وکیل امجد پرویز ملک کی وساطت سے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پیش کی،مریم نواز کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ نیب نے ابھی تک ریفرنس دائرنہیں کیا، اس لئے مریم نواز کو عدالت میں حاضری سے استثنیٰ دیا جائے،انہوں نے کہا کہ خاتون ہونے کے ناطے انہیں پیش ہونے میں مشکل کا سامنا کرنا پڑتاہے، مریم نواز کے امجد پرویز نے مختلف کیسوں کے حوالے سے کہا کہ قانون کے تحت ریفرنس داخل ہونے تک ملزم کو حاضری سے استثنیٰ دیا جاسکتا ہے،جیساکہ اس سے پہلے تحریک انصاف کے راہنما اور سابق صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کو ریفرنس دائر ہونے تک عدالت میں حاضری سے استثنیٰ مل چکا ہے،نیب کے وکیل حافظ اسد اعوان نے درخواست کی مخالفت کی اور استدعا کی کہ انہیں تحریری جواب داخل کیلئے مہلت دی جائے لیکن عدالت نے یہ استدعا مسترد کر دی، حاضری سے استثنیٰ کے دوران سلمان راؤ مریم نواز کی نمائندگی کیلئے احتساب عدالت میں پیش ہوں گے، عدالت نے یوسف عباس کے جوڈیشل ریمانڈ میں 6 دسمبر تک توسیع کر تے ہوئے کیس کی سماعت ملتوی کردی،مریم نواز کی احتساب عدالت پیشی کے موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے، کمرہ عدالت میں جانے سے روکنے پرپولیس اہلکاروں اوروکلاء کے درمیان تلخ کلامی اور دھکم پیل بھی ہوئی۔احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر مریم نواز کی صحافیوں سے گفتگو نہ ہوسکی۔

چودھری شوگرملز ریفرنس 

مزید : صفحہ اول