اندراج مقدمہ کی درخواستوں سے عدالتوں پر مقدمات کابوجھ بڑھ گیا ، پولیس اصلاحات پر فوری عملدرآمد کویقینی بنایا جائے ،چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ

اندراج مقدمہ کی درخواستوں سے عدالتوں پر مقدمات کابوجھ بڑھ گیا ، پولیس ...
اندراج مقدمہ کی درخواستوں سے عدالتوں پر مقدمات کابوجھ بڑھ گیا ، پولیس اصلاحات پر فوری عملدرآمد کویقینی بنایا جائے ،چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیف جسٹس سپریم کورٹ آصف سعید کھوسہ نے کہاکہ اندراج مقدمہ کی درخواستوںسے عدالتوں پر مقدمات کابوجھ بڑھ چکا ہے ، پولیس اصلاحات پر فوری عملدرآمد کویقینی بنایا جائے ، تفتیش کے معیار کو بہتر کرنے سے متعلق اقدامات کو یقینی بنایا جائے ۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں لاہور رجسٹری میں پولیس ریفارمز سے متعلق اجلاس ہوا جس میں چاروں صوبوں کے آئی جیز کے علاوہ اسلام آباد،گلگت بلتستان کے آئی جی بھی شریک ہوئے،سپریم کورٹ کے سینئر جج جسٹس گلزاراحمد بھی خصوصی طور پر اجلاس میں شریک ہوئے،اجلاس میں پولیس اصلاحات کے بارے میں اقدامات کا جائزہ لیاگیا،چیف جسٹس نے عدالتوں میں اندراج مقدمہ کی درخواستوں کی تعداد میں اضافے پر تشویش کا اظہار کیا ۔

چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہاکہ درخواستوں کے اضافہ سے عدالتوںپر مقدمات کابوجھ بڑھ چکا ہے ،اندراج مقدمہ کی درخواستوں کے اضافہ سے عدالتوں پر مقدمات کابوجھ بڑھ چکا ہے ، پولیس اصلاحات پر فوری عملدرآمد کویقینی بنایا جائے ، تفتیش کے معیار کو بہتر کرنے سے متعلق اقدامات کو یقینی بنایا جائے ۔

چیف جسٹس آف پاکستان نے تھانوں میں مقدمات کے بروقت اندراج کے اقدامات کو یقینی بنانے کا حکم دیدیا،چیف جسٹس نے پولیس کمپلینٹ سیل میں موصول شکایات کے فوری ازالے کا حکم دیدیا،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ تفتیش کے معیار کو بہتر کرنے سے متعلق اقدامات کو یقینی بنایا جائے ،بریت اور ضمانتوں سے متعلق کیسز پر جواب بروقت جمع کروایا جائے ۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /پنجاب /لاہور