سندھ میں غیر قانونی تعمیرات کیخلاف کارروائی، خصوصی عدالتیں بنانے کا فیصلہ

سندھ میں غیر قانونی تعمیرات کیخلاف کارروائی، خصوصی عدالتیں بنانے کا فیصلہ
سندھ میں غیر قانونی تعمیرات کیخلاف کارروائی، خصوصی عدالتیں بنانے کا فیصلہ

  



کراچی(صباح نیوز)سندھ حکومت کو غیرقانونی تعمیرات کے خلاف چھ سال بعد قانون پر سختی سے عمل درآمدکا خیال آگیا، سندھ میں خصوصی عدالتوں کے قیام کا فیصلہ کرلیا گیا ہے جو غیرقانونی، خلاف ضابطہ تعمیرات کے مقدمات کی سماعت کریں گی۔

محکمہ قانون سندھ کے ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ خصوصی عدالتوں میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے بائی لاز کی خلاف ورزی پر نجی و سرکاری شکایات کی سماعت ہوگی۔یہ عدالتیں بغیر این او سی رہائشی منصوبے شروع کرنے، جعلی اور غیرقانونی پراجیکٹس کیخلاف کیسز کی بھی سماعت کرسکیں گی۔ واضح رہے کہ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی خصوصی عدالتوں کے قیام کا قانون2013میں منظور ہواتھا۔سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی اسپیشل کورٹس میں ججز کا تقرر چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ کی مشاورت سے ہوگا۔ دریں اثناء حکومت سندھ نے بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے تھانوں کی تعداد بھی بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان تھانوں کی پولیس کوغیرقانونی تعمیرات، منظور شدہ کنسٹرکشن پلان کی خلاف ورزی پر متعلقہ افراد کی گرفتاری کا اختیار ہوگا۔ غیرقانونی تعمیرات پر مروجہ قانون کے تحت چھ ماہ قید و جرمانہ ہو سکتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سندھ کابینہ 26نومبر کو خصوصی عدالتوں کے قیام سے متعلق اہم فیصلہ کریگی اور یہ معاملہ کابینہ اجلاس کے ایجنڈے میںبھی شامل ہے۔ پہلے مرحلے میں کراچی میں خصوصی عدالتیں قائم کی جائیں گی اور  پہلے سے مختلف عدالتوں میں زیر سماعت مقدمات  بھی خصوصی عدالتوں کومنتقل ہوجائیں گے

مزید : علاقائی /سندھ /کراچی