ذاتی معالج نے نواز شریف کوخرابی صحت کے باعث سفر کرنے سے منع کردیا

ذاتی معالج نے نواز شریف کوخرابی صحت کے باعث سفر کرنے سے منع کردیا
ذاتی معالج نے نواز شریف کوخرابی صحت کے باعث سفر کرنے سے منع کردیا

  

لندن(ڈیلی پاکستان آن لائن)ذاتی معالج نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد محمد نواز شریف کوخرابی صحت کے باعث سفر کرنے سے منع کردیا ہے۔

نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے ذاتی معالج نے انہیں سفر کرنے سے منع کر دیا ہے ،اس سے قبل میاں نواز شریف اپنی والدہ کی میت کے ساتھ پاکستان جانے کے لئے تیار ہو گئے تھے تاہم لندن میں موجود ان کے صاحبزادوں حسن اورحسین نواز سمیت اسحاق ڈار نے اس فیصلے کی مخالفت کی تھی جبکہ پاکستان میں موجود ان کی صاحبزادی مریم نواز نے بھی کہا تھا کہ کسی حکومتی شخص میں اتنی انسانیت نہیں تھی کہ مجھ تک دادی کی وفات کی اطلاع پہنچا دیتے،میں نے میاں صاحب کو درخواست کی ہے کہ بالکل واپس نا آئیں، یہ ظالم اور انتقام میں اندھےلوگ ہیں جن سے کسی بھی قسم کی انسانیت کی توقع نہیں۔دوسری طرف اسحاق ڈار نے برطانوی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیگم شمیم اختر کا ڈیتھ سرٹیفیکٹ اور دوسری دستاویزات مکمل کرنے میں دو سے تین دن کا وقت لگ جائے گا جس کے بعد ان کی میت تدفین کے لیے لاہور روانہ کی جائے گی،میت کے ساتھ نواز شریف اور شہباز شریف کی بہن کوثر ساتھ آئیں گی ۔

یاد رہے کہ اس سے قبل مشرف دور میں نواز شریف اپنے والد کے جنازے میں بھی شرکت نہیں کر سکے تھے جبکہ بیگم کلثوم نواز کی وفات کے موقع پر نواز شریف کے دونوں بیٹے حسن اور حسین نواز  پاکستان نہیں گئے آئے تھے اور اُنہوں نے لندن ہی میں اپنی والدہ کی نماز جناز ادا کی تھی۔

مزید :

قومی -