ملکی حالات وزیرستان آپریشن کے متحمل نہیں: منور حسن

ملکی حالات وزیرستان آپریشن کے متحمل نہیں: منور حسن
ملکی حالات وزیرستان آپریشن کے متحمل نہیں: منور حسن

  

شیخو پورہ(مانیٹرنگ ڈیسک)امیر جماعت اسلامی سید منور حسن نے کہا ہے کہ ماضی میں پیپلز پارٹی کو سپریم کورٹ کے فیصلوں پر عمل کا مشور ہ دینے والے اور سپریم کورٹ کے فیصلوں کو سپریم کہنے والے آج وہی کھڑے ہیں جہاں ماضی میں پیپلز پارٹی کھڑی تھی۔ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن شیخوپورہ میں وکلاءسے خطاب کرتے ہوئے سید منور حسن نے کہا کہ وکلاءبرادری نے ہمیشہ نازک اور حساس معاملات میں قوم کی رہنمائی کی ہے اور آج ملک جس انارکی کا شکار ہے وکلاءکو اس میں بھی آگے بڑھ کر اپنا کرداد ادا کرنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ ملک کے موجودہ حالات اس بات کے متحمل نہیں ہیں کہ شمالی وزیر ستان میں ملٹری آپریشن ہو اور اگر ایسا کیا گیا تو اس کے اثرات پورے ملک پر پڑیں گے اور ملک مزید دہشت گردی اور افراتفری کا شکار ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں ملٹری آپریشن عوام اور فوج کے مابین نفرت پیدا کرتا ہے تاہم ملٹری آپریشن کی بجائے مذاکرات کا راستہ اپنایا جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ بلوچی، قبائلی اور صوبہ خیبر پختون خواہ کے عوام کی حب الوطنی پر شک نہیں کیا جا سکتا۔انہوں نے کہا کہ سند ھ میں اکثریت کے باوجود پیپلز پارٹی ایم کیو ایم کے ہاتھو ں ہائی جیک ہوگئی ہے۔مفاہمت کی پالیسی کے نام پر سندھ میں دہشت گردوں کو گود میں بٹھا لیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں انتخابات کے علاوہ تبدیلی کا کوئی راستہ نہیں ہے اور تبدیلی عوام کے ہاتھوں میں ہے اب عوام کا کام ہے کہ وہ کرپٹ لوگوں کو منتخب کرتی ہے یا پھر ان سے جان چھڑاتی ہے۔

مزید : شیخوپورہ