پاکستان کو سنگین مسائل سے نکالنے کیلئے مفاداتی سیاست کو پس پشت ڈالنا ہوگا:مظہر اسلم

پاکستان کو سنگین مسائل سے نکالنے کیلئے مفاداتی سیاست کو پس پشت ڈالنا ...
پاکستان کو سنگین مسائل سے نکالنے کیلئے مفاداتی سیاست کو پس پشت ڈالنا ہوگا:مظہر اسلم

  


لندن (بیورورپورٹ)برطانیہ کے معروف قانون دان سالیسٹر مظہر اسلم نے کہا ہے کہ ایسی جموریت کو فروغ دینا چاہتے ہیں جس میں عوام کے بنیادی حقوق کا حقیقی معنوں میں تحفظ ہو تاکہ عوام کے بنیادی حقوق کیلئے انہیں خوار نہ ہونا پڑے پاکستان ایک جمہوری ملک ہے جس میں ہر شہری کے حقوق یکساں ہیں ان کے جان و مال کے تحفظ کی ذمہ داری حکومت پر عائد ہوتی ہے جو ہر صورت یقینی ہونی چاہیے مگر اسکے برعکس پاکستان میں ہر جماعت اپنی پارٹی کا جلسہ کامیاب کرانے کے لیے پوری طاقت صرف کر رہی ہے ایک دوسرے کو شکست دینے اور نیچا دکھانے کے لیے عوام کو نظر انداز کیا جا رہا ہے انہوں نے کہا کہ 1973کا آئین موجود ہے مگر اس پر عمل کرنے کی ضرورت ہے اس پر عمل درآمد کرانے کے لیے کیا کوئی تیسری طاقت کا انتظار کیا جا رہا ہے جو وطن عزیز میں ہیں وہی اس کی پاسداری کے پابند بھی ہیں حکومت اور اپوزیشن جماعتوں کو ملکر پاکستان کی بقا ‘ عوامی حقو ق اور جمہوریت کیلئے لڑنے کی ضرورت ہے ملک میں بیروزگاری کا جن بے قابو ہے بجلی ‘ تعلیم اور صحت کے میدان میں بھی خستہ حالی صاف دیکھی جا سکتی ہے سالیسٹر منصور احمد نے کہا کہ قانون کی بالا دستی اور آئین کی پاسداری کرنا مہذب قوموں کا شیوہ ہوتا ہے ایک دوسرے کا احترام اور اپنی حدود میں رہ کر ملکی ترقی کیلئے کام کیا جائے تو کوئی بھی ہم سے آگے نہیں نکل سکتا ‘ نہ صرف اپنے جلسہ کو کامیاب کرانے بلکہ ذاتیات کی سو چ سے نکل کر عوام کیلئے کچھ کرنے کی جستجو اور انکے مفادات کا تحفظ کرنیوالے حکمران ہی پاکستان کا کھویا ہوا تشخص بحال کرا سکتے ہیں بیروزگاری اور مہنگائی کا خاتمہ وقت کی اہم ضرورت ہے ‘ اس موقع پر سالیسٹر مظہر اسلم ‘ سالیسٹر منصور احمد ‘ سالیسٹر خالد محمود ‘ سالیسٹر شاہد حسین اور دیگر افراد نے مختلف امور پر تبادلہ خیال بھی کیا ۔

مزید : عالمی منظر