سڈنی‘ سعودی خواتین شائقین کے سٹیڈیم میں داخلے پر پابندی عا ئد

سڈنی‘ سعودی خواتین شائقین کے سٹیڈیم میں داخلے پر پابندی عا ئد

  

سڈنی(آن لائن) آسٹریلیا کے مرکزی شہر سڈنی میں حال ہی میں ہونے والے فٹبال میچ کے مقابلوں کے دوران سعودی عرب کی خواتین تماشائیوں کو سٹیڈیم میں داخلے سے روک دیا گیا جبکہ سعودی عرب کے طلباءاور دوسرے عام شہریوں کو بھی میچ دیکھنے کے لئے ٹکٹ بروقت فروخت نہیں کیے گئے۔العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سڈنی میں موجود سعودی طلبا اور خواتین کی بڑی تعداد نے ویسٹرن سڈنی کلب کی انتظامیہ کے خلاف سخت شکایات کی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ سڈنی کے سٹیڈیم میں سعودی عرب کے الھلال فٹبال کلب اور سڈنی کے ویسٹرن کلب کے درمیان میچ شروع ہونے سے دو روز قبل انہوں نے ٹکٹ کے حصول کی کوشش کی لیکن انہیں ٹکٹ نہیں دیئے گئے۔

 طلباءاور خواتین نے استفسار کیا ہے سڈنی ویسٹرن کلب کی انتظامیہ نے کس قانون کے تحت سعودی خواتین تماشائیوں کو کھیل کے میدان میں داخلے سے روکا ہے؟ایک سعودی شہری نے بتایا کہ جب وہ ٹکٹ لینے کاونٹر پر پہنچے تو انہیں بتایا گیا کہ صرف مرد اور بچوں کو میچ دیکھنے کے لئے سٹیڈیم میں داخلے کی اجازت دی جائے گی۔ خواتین میچ دیکھنے گراﺅنڈ میں نہیں آ سکتی ہیں۔ایک سعودی طالب علم نے بتایا کہ سڈنی میں ایشیائی فٹبال میچ کا فائنل دیکھنے والوں کی بڑی تعداد نے سٹیڈیم کا رخ کیا لیکن انہیں بتایا کہ الھلال کلب کی طرف سے صرف دو ہزار ٹکٹوں کا کوٹا فراہم کیا گیا۔العربیہ ڈاٹ نیٹ نے اپنی ایک رپورٹ میں سڈنی میں ہونے والے کھیل کے مقابلے سے قبل ٹکٹوں کے حصول میں سعودی شہریوں کو درپیش مشکلات سے آگاہ کیا تھا۔ رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ سڈنی فٹ بال گراﺅنڈ میں داخلے کیلئے ایک ٹکٹ کی قیمت 30 ڈالر مقرر کی گئی تھی جبکہ بلیک میں یہی ٹکٹیں 50 ڈالر تک میں فروخت کی جا رہی تھیں۔

مزید :

عالمی منظر -