عراق وزیر اعظم کی ایرانی صدر سے ملاقات ،دو طرفہ تعاون بڑھانے پر اتفاق

عراق وزیر اعظم کی ایرانی صدر سے ملاقات ،دو طرفہ تعاون بڑھانے پر اتفاق ...

  

                                                                                                           تہران (این این آئی)عراقی وزیر اعظم حیدرالعبادی نے ایرانی صدر ڈاکٹر حسن روحانی سے سعد آباد میں ایوان صدر میں ان سے ملاقات کی جس میں دونوں رہ نماﺅں نے دوطرفہ تعاون بڑھانے پراتفاق کیا۔ذرائع کے مطابق ملاقات میں ایران میں ولایت فقیہ کے نظام حکومت کے خلاف سرگرم مجاھدین خلق اور دولت اسلامی عراق وشام ”داعش“ سب سے اہم موضوع رہے۔ صدر روحانی نے عراقی وزیراعظم سے مطالبہ کیا کہ وہ جس طرح داعش کی سرکوبی کےلئے جنگ لڑ رہے ہیں، اسی طرح مجاھدین خلق کو بھی ملک سے نکال باہر کریں۔ایرانی میڈیا کے مطابق صدر حسن روحانی نے وزیراعظم العبادی سے گفتگو کے دوران انہیں یقین دلایا کہ تہران داعش اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بغداد کی ہر ممکن مدد جاری رکھے گا انہوں نے کہا کہ ایران اس بات پریقین رکھتا ہے کہ دہشت گرد گروپوں کے خلاف بھرپور جنگ عراقی قوم اور اس کی مسلح افواج کی اہم ترین ذمہ داری ہے۔ایرانی صدر حسن روحانی نے عراقی وزیراعظم سے بات چیت کرتے ہوئے ان پر زور دیا کہ وہ اپنے ملک میں موجود ایران مخالف تنظیم”مجاھدین خلق“ کو وہاں سے نکال باہر کریں۔ اس کے جواب میں عراقی وزیراعظم کا کہنا تھا کہ مجاھدین خلق کی عراق سے باہرکسی دوسرے ملک میں منتقلی کی ذمہ داری عالمی برادری پرعاید ہوتی ہے۔ عالمی برادری کو چاہیے کہ وہ مجاھدین خلق کے لیے کسی دوسری جگہ کا انتخاب کرے تاہم انہوں نے یقین دلایا کہ بغداد مجاھدین خلق کو تہران کے خلاف اپنی سرزمین استعمال کرنے کی اجازت نہیں دے گا۔ایک عرب اخبار کے مطابق عراقی وزیراعظم کی ایرانی صدر حسن روحانی سے ملاقات کے موقع پر ایران کے نائب صدر اسحاق جہانگیری بھی موجود تھے۔ اسحاق جہانگیری نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں عراق کی مسلح افواج اور عراقی قوم کی صلاحیتوں پرانہیں مکمل اعتبار ہے۔ انہوں نے کہا کہ تہران، دہشت گردی کے خلاف جاری عراقی جنگ میں بغداد کی ہرممکن مدد جاری رکھے گا۔گفتگو کے دوران صدر روحانی نے عراق ایران باہمی تعلقات کی بہتری کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ پچھلے چند برسوں کے دوران دونوں ملکوں کے درمیان کئی شعبوں میں تعاون میں اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عراق کو درپیش حالات میں تہران دوستانہ تعلقات کو مزید مستحکم کرے گا۔ عراق اور ایران کے درمیان دوستانہ اور برادرانہ تعلقات دونوں ملکوں اور پورے خطے کے مفاد میں ہیں۔صدر حسن روحانی نے عراقی وزیراعظم حیدر العبادی کے اپنے بیرون ملک پہلے دورے کےلئے ایران کے انتخاب پر ان کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ العبادی کے دورے سے دونوں ممالک کی اقوام کے درمیان دیرینہ محبت کی عکاسی ہوتی ہے۔ انہوں نے عراق کے ساتھ تجارتی اور اقتصادی روابط بڑھانے کا یقین دلایا اور کہا کہ 2015ءکے آخر تک ایران کے عراق میں تجارتی حجم کو 30 ارب ڈالر تک پہنچایا جائے گا۔

ایرانی صدر سے ملاقات کے دوران بات چیت کرتے ہوئے عراقی وزیراعظم حیدر العبادی نے کہا کہ خطے کے دیرینہ تنازعات کے حوالےسے عراق اور ایران کے موقف میں ہم آہنگی موجود ہے۔ یہی وجہ ہے کہ میں نے بیرون ملک اپنے پہلے دورے کے لیے ایران کا انتخاب کیا۔العبادی نے کہاکہ عراق دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ایران کی مساعی کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے اور مجھے یقین ہے کہ مشکل حالات میں ایرانی حکومت بغداد کو تنہا نہیں چھوڑےگی۔صدر حسن روحانی نے داعش کے خلاف عالمی اتحادیوں کی کارروائی پرشبہ کا اظہار کیا ۔

مزید :

عالمی منظر -