میامی ،سائنسدانوں نے حیرت انگیز ”طلسماتی“ چھتری ایجاد کرلی

میامی ،سائنسدانوں نے حیرت انگیز ”طلسماتی“ چھتری ایجاد کرلی
میامی ،سائنسدانوں نے حیرت انگیز ”طلسماتی“ چھتری ایجاد کرلی

  

میامی (نیوز ڈیسک) بارشوں کے موسم میں چھتری کا استعمال تو ہر کوئی کرتا ہے، اس کے علاوہ موسم گرما میں دھوپ کی شدت سے بچاﺅ کے لئے بھی چھتریاں بہت مفید ثابت ہوتی ہیں۔ اس لئے موجد حضرات اور ٹیکنالوجی کے بڑے ادارے جدید چھتریاں بنانے کے کاموں میں دن رات جتے ہوئے ہیں۔ اسی سلسلے میں کک سٹارٹر پروجیکٹ کے تحت ایسی چھتریاں بنائی گئی ہیں جو ہوائی مدد سے آپریٹ ہوتی ہیں۔ اسے ایئر ایمبریلا کا نام دیا گیا ہے۔ جس کا راڈ موٹر سے چلتا ہے جو ایک لیتھیم بیٹری چلاتی ہے اور اس موٹر کے ساتھ پنکھا نصب ہوتا ہے۔ یہ پنکھا برستی بارش کی رم جھم کو روکتا ہے۔ یہ چھتری اے بی اور سی ماڈل میں دستیاب ہے۔ ماڈل A کی چھتری خواتین کے لئے ہے، یہ 12 سے 15 منٹ تک بارش کو روک سکتی ہے۔ ماڈل B کی چھتری 30 منٹ تک کام کرتی ہے جبکہ C ماڈل کا دورانیہ اس سے بھی زیادہ ہے، اس کی قیمت 118 ڈالر مقرر ہوتی ہے۔

مزید : علاقائی