امریکہ کے خطہ سے نکلنے کے بعد بھارت مقبوضہ کشمیر پرقبضہ بر قرار نہٰیں رکھ سکے گا مذہبی و سیاسی رہنما

امریکہ کے خطہ سے نکلنے کے بعد بھارت مقبوضہ کشمیر پرقبضہ بر قرار نہٰیں رکھ سکے ...

                       لاہور(سٹاف رپورٹر)مذہبی و سیاسی رہنماﺅں نے کہا ہے کہ بھارت بیرونی قوتوں کی شہ پر کنٹرول لائن پر بار بار جارحیت کا ارتکاب کرتے ہوئے نہتے شہریوں کو نشانہ بنارہا ہے۔ حکومت پاکستان کو چاہیے کہ وہ کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے اس کی دہشت گردی کو دنیا کے سامنے بے نقاب کرے۔اگر اس موقع پر خاموشی اختیار کی گئی تووہ اپنی ان مذموم حرکتوں سے باز نہیں آئے گا۔ ان خیالات کا اظہار جماعة الدعوة سیاسی امورکے سربراہ پروفیسرحافظ عبدالرحمان مکی،تحریک حرمت رسول ﷺ کے کنونیئرمولانا امیر حمزہ،جماعت اہلحدیث کے سربراہ حافظ عبدالغفار روپڑی،جماعة الدعوة آزاد کشمیر کے امیر مولانا عبدالعزیز علوی،جماعة الدعوة لاہور کے امیر مولانا ابوالہاشم ،تحریک آزادی جموں کشمیر کے جنرل سیکرٹری حافظ خالد ولیدنے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوںنے کہا کہ کشمیریوں کی جدوجہد آزادی میں تیزی نے بھارت کو سخت پریشانی میں مبتلا کر رکھا ہے۔امریکہ کے خطہ سے نکلنے کے بعد بھارت مقبوضہ کشمیر پر اپنا غاصبانہ قبضہ برقرار نہیں رکھ سکے گا۔ بھارت منظم سازشوں ومنصوبہ بندی کے تحت سرحدوں پر جنگ کا ماحول پیدا کر رہا ہے اور نہتے شہریوں کو نشانہ بناکردہشت گردی کا ارتکاب کیا جا رہا ہے۔ حکومت پاکستان کواس مسئلہ پر کسی صورت خاموشی اختیارنہیں کرنی چاہیے۔مظلوم کشمیریوں کی مدد پوری مسلم امہ پر فرض ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے پچھلے بارہ برسوں میں اس خطہ میں امریکہ کی موجودگی سے بہت فائدے اٹھائے ہیں لیکن افغانستان میں شکست کے بعد امریکہ بھارت کی پشت پناہی کے قابل نہیں رہا۔اب ان شاءاللہ ان کی سازشیں زیادہ دیر تک کامیاب نہیں ہو سکیں گی۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان کو مسئلہ کشمیر‘ کنٹرول لائن پر جارحیت اور دیگر امور پر بھارت و امریکہ کے کسی دباﺅ میں نہیں آنا چاہئے۔

مذہبی و سیاسی رہنما

مزید : صفحہ آخر