کاتالونیہ نے سپین کی جانب سے براہ راست حکومت کا منصوبہ مسترد کردیا

کاتالونیہ نے سپین کی جانب سے براہ راست حکومت کا منصوبہ مسترد کردیا

میڈرڈ( آن لائن) کاتالونیہ کہ رہنما کارلیس پوگیمونٹ نے کہا ہے کہ کاتالونیہ سپین کی مرکزی حکومت کی جانب سے خطے پر براہِ راست حکمرانی کے منصوبوں کو قبول نہیں کرے گا۔برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق گزشتہ روز سپین کے وزیر اعظم نے کاتالونیہ کے حکمرانوں کو علیحدہ کر کے آزادی کے خواہشمند اس خطے پر مرکزی حکومت کی مکمل حاکمیت بحال کرنے کے منصوبے کا اعلان کیا تھا۔کاتالونیہ کے رہنما کارلیس پوگیمونٹ ٹیلی وڑن پر نشر ہونے والے ایک خطاب میں سپین کے وزیرِ اعظم کے اقدامات اور جنرل فرانکو کے اقدامات کا موازنہ کیا۔انھوں نے اسے 1939ء سے 1975ء کے دوران جنرل فرانکو کی آمریت کے بعد کاتالونیہ کے اداروں پر بدترین حملہ قرار دیا۔کاتالونیہ کے رہنما نے خطے کے حقوق کے تحفظ کے لیے اپیل کی ہے اور سپین کے فیصلہ کو بغاوت قرار دیا ہے۔انہوں نے مرکزی حکومت کی جانب سے آزادی کی مہم کو ختم کرنے کی گزارشات کو نظر انداز کیا ہے۔واضح رہے کہ کاتالونیہ میں آزادی کے ریفرنڈم نے ملک میں سیاسی بحران پیدا کردیا ہے۔

مزید : عالمی منظر