سردیوں میں گھریلو اور کمرشل سیکٹر کوبلاتعطل گیس دی جائیگی،امجد لطیف

سردیوں میں گھریلو اور کمرشل سیکٹر کوبلاتعطل گیس دی جائیگی،امجد لطیف

لاہور(لیاقت کھرل) ایم ڈی سوئی ناردرن گیس کمپنی امجد لطیف نے کہا ہے کہ سردیوں میں صنعتوں، سی این جی ، پاور سیکٹرز اور گھریلو سیکٹر میں گیس کی بلاتعطل سپلائی فراہم کی جائے گی۔ گیس کے ذخائر 2ہزار ملین کیوبک فٹ موجود جبکہ اگلے چند روز تک 600 ملین کیوبک فٹ مزید سسٹم میں شامل کی جارہی ہے جس کے بعد گیس کی ڈیمانڈ اور سپلائی میں کوئی خاص فرق نہیں آئے گی۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے ’’ روزنامہ پاکستان‘‘ سے خصوصی گفتگو کے دوران کیا ہے۔ ایم ڈی سوئی ناردرن گیس کمپنی نے کہا کہ ان کی تعیناتی سے قبل گیس کمپنی ایک منافع بخش ادارہ نہیں تھا اب شب و روز محنت جس میں ان کی ٹیم کا بہت بڑا کردار ہے جس سے گیس کمپنی پہلی دفعہ ایک منافع بخش ادارہ بن چکا ہے اور گیس کمپنی مکمل طور پر اپنے پاؤں پر کھڑی ہو گئی ہے جس کی بناء پر کئی سالوں سے صنعتوں اور کمرشل سیکٹر کو گیس کے نئے کنکشن کی بندش پر سے پابندی اٹھا لی گئی ہے اور صنعتوں اور سی این جی سمیت کمرشل سنٹرز کو گیس کے نئے کنکشن فراہم کئے جارہے ہیں جبکہ اس کے ساتھ گھریلو سیکٹر میں بھی گیس کنکشن کے ٹارگٹ کو مقررہ وقت سے پہلے پورا کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ مالی سال میں ساڑھے پانچ لاکھ سے زائد جبکہ رواں مالی سال میں سات لاکھ سے زائد گیس کے نئے کنکش صارفین کو فراہم کئے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ گیس کے ذخائر میں کئی سالوں سے شدید کمی چلی آ رہی تھی جس کے باعث گھریلو سیکٹر سمیت صنعتوں اور کمرشل سیکٹرز میں کئی کئی گھنٹے اور کئی کئی روز لوڈشیڈنگ کرنا پڑتی تھی۔ اب اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے گیس ذخائر وافر مقدار میں موجود ہیں۔ اس وقت دو ہزار ملین کیوبک فٹ گیس سسٹم میں موجود ہے اور اس کے مقابلے میں گیس کی ڈیمانڈ 1600 سے 1700 ملین کیوبک فٹ ہے۔ سردیوں میں گیس کی ڈیمانڈ 2400 سے2600 ملین کیوبک فٹ تک پہنچ جاتی ہے جس کو پورا کرنے کے لئے اگلے چند روز تک 600 ملین کیوبک فٹ گیس کے ذخائر مزید سسٹم میں شامل ہو جائیں گے۔ جو کہ ایس این جی پی ایل نے ایل این جی کی شکل میں گیس درآمد کرنا شروع کر رکھی ہے جس سے سردیوں میں گیس کی لوڈشیڈنگ نہیں ہو گی اور سردیوں میں صنعتیں بھی چلیں گیں اور سی این جی سمیت چھوٹی اور بڑی فیکٹریاں اورکارخانے بھی گیس پر چلیں گے جبکہ اس کے ساتھ ساتھ صنعتوں ، سی این جی اور کمرشل صارفین کو گیس کے نئے کنکشن کی فراہمی کے لئے کئی سالوں سے عائد پابندی کو بھی ختم کر دیا گیا ہے جس میں 4000 سے زائد صنعتی ، سی این جی اور کمرشل صارفین نے درخواستیں جمع کروا رکھی ہیں جن پر ترجیحی بنیادوں پر گیس کنکشن کی فراہمی کا سلسلہ جاری ہے۔ انہوں نے بتایا کہ آئندہ سردیوں میں صارفین کو چاہیے کہ وہ کمپریسر اور گیس ہیٹر کا استعمال نہ کریں چونکہ اس سے گھریلو سیکٹر بری طرح متاثر ہوتا ہے۔ صارفین کو چاہیے کہ وہ گیس کمپنی کے ساتھ مکمل تعاون رکھیں تاکہ سردیوں میں صارفین کو وافر مقدار میں گیس کی فراہمی کو ممکن بنایا جا سکے۔

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...