معاشی پارٹنر کے علاوہ بھارت کے خطے میں سکیورٹی کے کردار کو تسلیم نہیں کرتے : خرم دستگیر

معاشی پارٹنر کے علاوہ بھارت کے خطے میں سکیورٹی کے کردار کو تسلیم نہیں کرتے : ...

لاہور( آن لائن) وفاقی وزیر فاع انجینئر خرم دستگیر نے کہا ہے کہ پاکستان خطے میں بھارت کے سکیورٹی کے کردار کو تسلیم نہیں کرے گا۔ ہماری نظر میں بھارت کا خطے میں صرف معاشی پارٹنر کے طور پر کردار ہوسکتا ہے۔ وہ پاکستان اور بالخصوص بلوچستان میں دراندازی کے لیے افغان سرزمین کو استعمال کر رہا ہے۔ سی پیک پر امریکی وزیر دفاع جیمز میٹس کا بیان بھی مسترد کرتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ ہم امریکہ کو یہ سمجھانے کی کوشش کر رہے ہیں کہ وہ پاکستان کو بھارت یا افغانستان کی عینک سے نہ دیکھے، یہ2009 والا پاکستان نہیں، ضرب عضب اور ردالفساد کے بعد والا پاکستان ہے ۔انہوں نے کہا کہ گھر کی صفائی سے متعلق خواجہ آصف اور احسن اقبال کے بیانات کو غلط سمجھا گیا، ہمیں اپنے گھر کی صفائی کرنی ہے، پاکستان مکمل طور پر صاف نہیں ہوا۔ پاکستان کی سرزمین کسی دوسرے ملک کے خلاف دہشت گردی کے لیے استعمال نہیں کی ہورہی۔ ہم نے دہشت گردی سے لڑ لیا اب انتہا پسندی اور تشدد سے لڑنا ہے۔ وفاقی وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ طالبان پر پاکستان کا اثر پہلے سے بہت کم ہے اور خطے کے چند دیگر ممالک اپنے مفادات کی خاطر ان کی حمایت کر رہے ہیں جنوبی ایشیا اور افغانستان کے حوالے سے امریکہ کی نئی پالیسی سے متعلق خرم دستگیر کا کہنا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی پالیسی حقائق کے برعکس ہے، اس وقت افغانستان کے 40فیصد علاقے میں دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہیں موجود ہیں، انٹیلی جنس شیئرنگ کی بنیاد پر غیر ملکی خاندان کو پاکستان سے بازیاب کرائے جانے کی خوشی ہے، لیکن سوال یہ ہے کہ یہ آپریشن سرحد کے اس پار کیوں نہیں ہوا۔

خرم دستگیر

مزید : کراچی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...