مظفرآباد، شہری پر بیہمانہ تشد د کرنے والوں کو پولیس تاحال گرفتارنہ کرسکی

مظفرآباد، شہری پر بیہمانہ تشد د کرنے والوں کو پولیس تاحال گرفتارنہ کرسکی

مظفرآباد(بیورورپورٹ)چھتر کلاس بااثر غنڈوں کی طرف سے تشدد کا شکار ہونے والا عبدالجلیل ساکنہ نور پور نکراں زندگی وموت کی کشمکش میں،انسپکٹر جنرل پولیس کے واضح حکم کے باوجود ایس ایس پی مظفرآباد مجرمان کو گرفتار کرنے میں ناکام۔تھانہ پولیس کلیاں بھی بے بس 14دن گزرنے کے باوجود مجرم سہیل اور فیصل گرفتار نہ ہو سکے۔9اکتوبر 2017کو ٹمبی کومی کوٹ سے مظفرآباد کوسٹر کے مالک ڈرائیور عبدالجلیل کو چھتر کلاس کے مقام پر مقامی بااثر غنڈوں سہیل اور فیصل نے راستہ نہ دینے کا بہانہ بنا کر تشدد کا نشانہ بنایا۔عبدالجیل کا چہرہ مسنح کر دیا گیا۔جبکہ اس کے جسم کے کئی حصوں پر درجن کے قریب شدید ضربیں آئیں۔زخمی عبدالجلیل کے اہل خانہ والد،بھائی اور گاؤں کے لوگ دس اکتوبر کو انسپکٹر جنرل پولیس کے دفتر گئے جنہوں نے ایس ایس پی مظفرآباد کو کارروائی کی ہدایت کی ایس پی نے تھانہ کلیاں کی طرف لکھا مگر دس اکتوبر سے بائیس اکتوبر تک مجرمان گرفار نہ ہو سکے۔گزشتہ روز زخمی عبدالجلیل کا والد اپنے گاؤں کے درجنوں معززین کے ہمراہ سینٹرل پریس کلب مظفرآباد پہنچ گیا۔زخمی کے والد عبدالقیوم خان نے کہا کہ بااثر ملزمان کی عدم گرفتاری ریاست کے آئین آزادی اور انصاف پر سوالیہ نشان ہے جس ریاست میں آئی جی کے حکم پر لوگ گرفتار نہ ہوں اس ریاس کے حکمرانوں کو سوچنا ہو گا۔عبدالقیوم خان نے وزیراعظم سے اپیل کی ہے کہ انہیں انصاف فراہم کیا جائے دو ہفتے گزرنے کے باوجود ملزمان کی گرفتاری نہ ہونا سوالیہ نشان ہے۔عبدالقیوم اور دیگر نے کہا کہ اگر انہیں انصاف نہ ملا تو وزیراعظم سیکرٹریٹ کے باہر سینکڑوں لوگوں کے ساتھ احتجاجی دھرنا دیا جائے گا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...