تحریک انصاف درگئی کا فوری تنظیم سازی کرنے کا مطالبہ

تحریک انصاف درگئی کا فوری تنظیم سازی کرنے کا مطالبہ

بٹ خیلہ (بیورورپورٹ)پاکستان تحریک انصاف ملاکنڈ تحصیل درگئی نے فوری طور پر تنظیم سازی کرنے کا مطالبہ کردیا ۔ تنظیم سازی نہ ہو نے سے شمولیتی تقریبات رُک گئے ہیں اور کارکنوں میں مایوسی پھیل رہی ہے ۔ ایک ہفتے کے اندر اندر تنظیم سازی کی جائے ۔ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ پرویز خان خٹک ملاکنڈ تھری ہائیڈل آمدن سے منتخب ایم این اے جنید اکبر خان کو بھی فنڈز دینے کے احکامات دیں تاکہ حلقے میں ترقیاتی کام کئے جاسکیں اور کارکنوں کی مایوسی دور ہوں ۔تنظیم سازی میں پارٹی وژن اور سینئر کارکنوں کے رائے کا خیال رکھا جائے ۔ ان باتوں کا مطالبہ پاکستان تحریک انصاف تحصیل درگئی کے قائدین اور سرکردہ کارکنوں کے مشترکہ اجتماع جو کہ یونین کونسل کوپر میں زیر صدارت سلیما ن خان منعقد ہوا کے دوران کیا گیا جس سے سابق اُمیدوار صوبائی اسمبلی یاسر خان ایڈوکیٹ ، ممبران ضلع کونسل حاجی پیر مصور خان غازی ،تحسین اﷲ خان ، ڈویژنل ڈپٹی جنرل سیکرٹری یعقوب خان ، ممبر تحصیل کونسل حاجی افتخار خان ، سابق ضلعی سینئر نائب صدر محمد رسول خان ، ماہر سیاسیات حاجی حیات خان ، نوید خان ،نائب ناظم واجد خان ،دلدار خان ، ارشاد خان ،محمد رحمان ،اعتبار گل ،جہانگیر خان ، حاجی محمد عمران ، اعتبار خان اور دیگر مقررین نے خطاب کیا ۔ مقررین نے کہا کہ پی ٹی آئی تحصیل درگئی چٹان کی طرح متحد ہے ۔کارکنوں میں کسی قسم کی گروپ بندی نہیں ہے اوراختلافات کی باتیں صرف پروپیگنڈے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ پارٹی ٹکٹ کے لئے اپلائی کرنا ہر کار کن کا جمہوری حق ہے تاہم قائدین نے جس اُمیدوار کو بھی ٹکٹ دیا تو ہم کامیابی کے لئے نامزد اُمیدوار سے زیادہ محنت اور کوشش کرینگے اور نامزد اُمیدوار کو بھاری اکثریت سے کامیاب کرائینگے ۔ انہوں نے کہا کہ ڈیڑھ سال سے زائد کا عرصہ گزرنے کے باوجود یہاں تنظیم ساز ی نہیں کی گئی جس سے کارکنوں میں مایوسی پھیل رہی ہے اور لوگوں میں غلط تاثر پایا جاتا ہے جبکہ دیگر جماعتوں سے پی ٹی آئی میں شمولیت کرنے کا سلسلہ رُک گیا ہے اس لئے ڈویژنل صدر سمیت دیگر متعلقہ قائدین ضلع ملاکنڈ تحصیل درگئی میں فوری طور پر تنظیم سازی مکمل کرکے کارکنوں کی مایوسی دور کریں ۔مقررین نے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخواہ پرویز خان خٹک سے مطالبہ کیا کہ ملاکنڈ تھری پاور پراجیکٹ سے حاصل ہونے والے آمدن میں سے ایم این اے جنید اکبر خان کو بھی فنڈز دینے کا احکامات صادر کریں کیونکہ حلقی پی کے 98ملاکنڈ میں پی ٹی آئی کا ایم پی اے نہیں ہے جس کی وجہ سے کارکنوں کا مسائل کا سامنا ہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر