ملکی استحکام کیلئے میدان سیاست میں آئے ہیں‘ الحاج لیاقت

ملکی استحکام کیلئے میدان سیاست میں آئے ہیں‘ الحاج لیاقت

پشاور( کرائمز رپورٹر) قومی اسمبلی حلقہ این اے 4 سے ملی مسلم لیگ کے حمایت یافتہ امیدوار الحاج لیاقت علی خان نے کہا ہے کہ وطن عزیز پاکستان کے استحکام کے لئے میدان سیاست میں آئے ہیں۔ کامیاب ہو حلقہ میں نئے تعلیی ادارے اور طبی مراکز کے ساتھ طالبات کیلئے یونیورسٹی کا قیام عمل میں لاوں گا۔ عوام سے کئے گئے وعدے پورے نہ کرنے والوں کو مسترد کرنے کا وقت آگیا۔ ہم حب وطن ووٹر ز کو سیاسی پنڈتوں سے بچانے کے لئے آئے ہیں۔ ہم مفادات کی سیاست کا خاتمہ اور ملکی مفاد کے لئے کام کریں گے۔ 26اکتوبر کو تھرماس پر مہر لگا کر ملک سے غربت، بدامنی، بے روزگاری کے خاتمے کے لئے ہمارا ساتھ دیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے چمکنی مین چوک، سوزوکی اڈا یو سی 65، لالہ کلے، ارمڑ میانہ یو سی46 پر کارنر میٹنگز، جلسوں اور ڈور ٹو ڈور مہم کے دوران خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ صدر ملی مسلم لیگ سیف اللہ خالد، حافظ عبدالرؤف، رانا محمد اشفاق، غلام قادر سبحانی، ابو معاذ عمران و دیگر نے بھی خطاب کیا۔ چمکنی مین چوک پر امیدوار الحاج لیاقت علی خان کی آمد پر بھر پور استقبال کیا گیا اور پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں۔ اس موقع لیاقت علی خان سے رشتہ کیا لاالہ الااللہ سمیت دیگر نعرے لگائے جاتے رہے۔ سوزوکی اڈہ یو سی65 میں انتخابی جلسہ میں مقامی افراد نے بڑی تعداد میں شرکت کی اور الحاج لیاقت علی خان کی حمایت کااعلان کیا۔ الحاج لیاقت علی خان کا کہنا تھا کہ وطن عزیز میں نظریہ پاکستان سے کھیلا جا رہا ہے۔ ختم نبوت پر ڈاکے،نصاب سے اسوہ رسول ﷺ کو نکالا جا رہا ہے اور آیات قرآنی کو خارج کیا جارہا ہے۔ آج اس پاکستان کو آپ کی ضرورت ہے جس کے اثاثہ و املاک کو بیچا جا رہا ہے۔خزانے کو مال مفت سمجھ کر لوٹا جا رہا ہے۔ پاکستان عالم اقوام میں ان حکمرانوں کی وجہ سے اپنا تشخص اور وقار کھو رہا ہے۔ ہم پاکستان کے تحفظ اور نظریئے کی حفاظت کے لئے میدان سیاست میں اترے ہیں۔ پاکستان کلمہ طیبہ کی بنیاد پر قائم کیا گیا تھا۔ جس کے لئے شہداء نے شہادتیں پیش کیں۔ ہم اس پاکستان کو لٹتا،کٹتا،پھٹتا نہیں دیکھ سکتے۔ا نہوں نے کہا کہ ہم سیاسی اغواکاروں سے وطن عزیز کو بچانے اور ووٹ کے تقدس کو محفوظ کرنے کے لئے آئے ہیں۔ ہم نظریئے کی بنیاد پر آئے ہیں۔اپنی ذات او رمفادت کے لئے میدان سیاست میں نہیں اترے۔ سیف اللہ خالد صدر ملی مسلم لیگ پاکستان کا کہنا تھا کہ 26 اکتوبر کی شام پاکستان جیتنے والا ہے۔ الحاج لیاقت علی خان کی جیت پاکستان اور نظریہ پاکستان، مظلوم کشمیریوں کی جیت ہے۔ گلی، محلے کی سطح پر خدمت کا کام کریں گے۔ ہم غربت کا خاتمہ کریں گے۔ رواداری کی سیاست کریں گے۔ ہم پاکستان کے محافظ ہیں، اس ملک میں پیدا ہوئے اور اسی وطن کی مٹی پر مرنا سعادت سمجھتے ہیں، وطن کے نظریئے اورجغرافیائی سرحدوں کی حفاظت کے لئے جانیں بھی قربان کر دیں گے۔ ہم بلا امتیاز خدمت کی سیاست کریں گے۔

 

مزید : پشاورصفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...