”ہمارے بورڈ کو چاہئے کہ وہ کھلاڑیوں کو۔۔۔“ کمار سنگاکارا نے سری لنکن ٹیم کے دورہ پاکستان پر ایسی بات کہہ دی کہ پاکستانیوں کیلئے یقین کرنا مشکل ہو جائے گا، جان کر آپ کے دل میں ان کیلئے پیار غصے میں بدل جائے گا

”ہمارے بورڈ کو چاہئے کہ وہ کھلاڑیوں کو۔۔۔“ کمار سنگاکارا نے سری لنکن ٹیم کے ...
”ہمارے بورڈ کو چاہئے کہ وہ کھلاڑیوں کو۔۔۔“ کمار سنگاکارا نے سری لنکن ٹیم کے دورہ پاکستان پر ایسی بات کہہ دی کہ پاکستانیوں کیلئے یقین کرنا مشکل ہو جائے گا، جان کر آپ کے دل میں ان کیلئے پیار غصے میں بدل جائے گا

  

کولمبو (ڈیلی پاکستان آن لائن) سری لنکا کے سابق کپتان کمار سنگاکارا نے کہا ہے کہ پاکستان کا دورہ کرنے کیلئے کھلاڑیوں پر دباﺅ ڈالنے کے بجائے انہیں خود فیصلہ کرنے کا موقع دیا جانا چاہئے تھا۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔”سنچری بنانے پر ایسی شخصیات کا فون آ گیا کہ گھبرا کر موبائل بند کر دیا“ پہلے میچ میں سنچری بنانے والے امام الحق نے ناقابل یقین انکشاف کر دیا

کمار سنگاکارا اس ٹیم کا حصہ تھے جس پر 2008ءمیں لاہور کے قذافی سٹیڈیم جاتے ہوئے دہشت گردوں نے حملہ کیا تھا اور اب ان کا خیال ہے کہ پاکستان کا دورہ کرنے کیلئے بورڈ انہیں خود فیصلہ کرنے کا موقع دیتا نا کہ ان پر دباﺅ ڈالا جاتا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ”یہ کھلاڑیوں کا انفرادی فیصلہ ہونا چاہئے۔ پی سی بی، سری لنکن کرکٹ بورڈ، آئی سی سی اور فیڈریشن آف انٹرنیشنل کرکٹرز ایسوسی ایشن کے درمیان کھلے مذاکرات ہونے چاہئے تھے۔ سب اکٹھے بیٹھ کر ایک دوسرے کیساتھ شفاف معلومات کا تبادلہ کرتے اور سیکیورٹی سے متعلق تمام معلومات کھلاڑیوں کو دینے کیساتھ ساتھ ان کی فیملیز کو بھی دی جاتیں، تاکہ کھلاڑی اس حوالے سے فیصلہ کر سکتے۔ “

یہ بھی پڑھیں۔۔۔پاکستان اور سری لنکا کے درمیان آخری ون ڈے آج کھیلا جائے گا، یہ میچ 4 بجے نہیں شروع ہو گا بلکہ۔۔۔ صحیح وقت جانئے

ان کا کہنا تھا کہ ”آئی سی سی کے نمائندوں اور دیگر فریقین کیساتھ گفتگو کے بعد کھلاڑیوں کے سامنے حقیقت آ جاتی اور انہیں پاکستان میں ملنے والی سیکیورٹی کے بارے میں بھی حقیقی معنوں میں پتہ چلتا جس کی بنیاد پر وہ پاکستان کا دورہ کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ کرتے۔ ان پر دباﺅ نہیں ڈالنا چاہئے تھا۔“

مزید : کھیل