سابق ایڈیشنل اٹارنی جنرل نصیر احمدبھٹہ کی بطورچیف انفارمیشن کمشنر تعیناتی لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج

سابق ایڈیشنل اٹارنی جنرل نصیر احمدبھٹہ کی بطورچیف انفارمیشن کمشنر تعیناتی ...

لاہور(نامہ نگار خصوصی )مسلم لیگ (ن) کے راہنماسابق ایم این اے اور سابق ایڈیشنل اٹارنی جنرل نصیر احمدبھٹہ کی بطورچیف انفارمیشن کمشنر تعیناتی کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا گیا۔

پنجاب حکومت کی56کمپنیوں میں 80ارب روپے کی کرپشن ،لاہورہائی کورٹ میں درخواست دائر

اس سلسلے میں چودھری شعیب سلیم ایڈووکیٹ نے درخواست دائر کی ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ ٹرانسپرنسی اینڈ رائٹ ٹو انفارمیشن ایکٹ کے تحت چیف کمشنر کی تعیناتی ہوتی ہے، ایکٹ کے تحت سیاستدان چیف انفارمیشن کمشنر تعینات نہیں ہو سکتا، درخواست میں یہ نکتہ بھی اٹھایا گیا ہے کہ چیف کمشنر کی اہلیت ہائیکورٹ کے جج کے برابر ہے، نصیر بھٹہ عدلیہ کے خلاف مسلم لیگ (ن)کی موجودہ مہم میں بھی مکمل فعال ہیں، درخواست میں استدعا کی گئی کہ نصیر بھٹہ لیگی حکومت کے خلاف معلومات دینے میں جانبداری دکھائیں گے، نصیر بھٹہ کی بطور چیف انفارمیشن کمشنر تعیناتی کالعدم کی جائے ،درخواست میں مزید استدعا کی گئی ہے کہ کیس کے حتمی فیصلے تک نصیر احمدبھٹہ کو بطور چیف انفارمیشن کمشنر کام کرنے سے روکا جائے۔

مزید : لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...