محکمہ آبپاشی نے 9ماہ تک تنخواہ دی،بعد میں تمام بھرتیاں بوگس قرار دے کرتنخواہیں روک لیں،متاثرین ہائی کورٹ پہنچ گئے

محکمہ آبپاشی نے 9ماہ تک تنخواہ دی،بعد میں تمام بھرتیاں بوگس قرار دے ...
محکمہ آبپاشی نے 9ماہ تک تنخواہ دی،بعد میں تمام بھرتیاں بوگس قرار دے کرتنخواہیں روک لیں،متاثرین ہائی کورٹ پہنچ گئے

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے محکمہ آبپاشی کے ملازمین کی تنخواہیں روکنے کے خلاف دائردرخواست پر سیکرٹری آبپاشی کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 3 ہفتوں میں جواب طلب کر لیاہے۔

پنجاب حکومت کی56کمپنیوں میں 80ارب روپے کی کرپشن ،لاہورہائی کورٹ میں درخواست دائر

جسٹس عائشہ اے ملک نے محمد عثمان سمیت دیگر ملازمین کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزاروں کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ انہیں دسمبر 2016 ءمیں محکمہ آبپاشی میں کنٹریکٹ پرملازم بھرتی کیا گیا، اس دوران محکمہ سے تنخواہیں باقاعدگی سے وصولی کی جا تی رہیں، محکمہ آبپاشی کے افسران نے بھرتی ہونے والے ملازمین کے کاغذات کی تصدیق کی،محکمہ میں بھرتی کے لئے تمام قواعد و ضوابط پورے کرنے کے بعد سروس بک بھی جاری کر دی گئی،9ماہ بعد محکمہ آبپاشی کی جانب سے تمام بھرتیوں کو بوگس قرار دے دیا گیا اور تنخواہیں بھی روک لی گئی ہیں لہذا عدالت ملازمین کی تنخواہیں ادا کرنے کا حکم دے۔

مزید : لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...