توانائی کے شعبے کی تعمیر نو ‘ عراقی حکومت اور جی ای کے درمیان معاہدہ

توانائی کے شعبے کی تعمیر نو ‘ عراقی حکومت اور جی ای کے درمیان معاہدہ
 توانائی کے شعبے کی تعمیر نو ‘ عراقی حکومت اور جی ای کے درمیان معاہدہ

  


لاہور( پ ر)جی ای GE نے عراق کے پاور سیکٹر کو ترقی دینے کے لیے عراقی وزارت بجلی کے ساتھ پرنسپلز آف کوآپریشن(پی او سی) پر دستخط کیے ہیں۔توقع ہے کہ یہ منصوبہ 14 گیگا واٹس(GW) بجلی پیدا کرے گا ،65,000 نئی ملازمتیں نکلیں گی، حکومت کو سالانہ3 بلین ڈالر کی بچت کرنے میں مدد دے گا ، ٹیکنالوجی کا مقامی مرکز قائم کیا جائے گااور اس سے پانی و صحت عامہ تک رسائی میں مدد ملے گی۔یہ جامع منصوبہ اگلے پچاس برسوں کے دوران عراقی عوام کی ترقی کے عہد اور جی ای کی مسلسل موجودگی کے ورثے پر استوار ہے ۔سمجھوتے میں موجودہ پاور پلانٹس کے لئے اپ گریڈز اور سروسز ؛ سمپل سائیکل پاور پلانٹس کی کمبائنڈ سائیکل پر منتقلی بھی شامل ہے،جو اضافی فیول کی کھپت یا مزید اخراج کے بغیر نئی بجلی پیدا کرنے میں مدد دے سکتی ہے؛اس کے ساتھ موثر اور قابل انحصار جنریشن ٹیکنالوجی کی مدد سے نئے پاور پلانٹس کا قیام بھی شامل ہے۔مزید برآں ، جی ای ملک بھر میں سب اسٹیشن اور اوور ہیڈ لائنز بھی لگائے گی اور جنریشن، ٹرانسمشن، اور ڈسٹری بیوشن پر محیط ایک سنٹرلائزڈ انرڈ مینجمنٹ سسٹم قائم کیا جائے گا ۔ان کوششوں سے14 GW بجلی شامل کرنے اور گرڈ کومنسلک مستحکم بنانے میں مدد ملے گی۔جی ای، گلوبل ایکسپورٹ کریڈٹ ایجنسیز اور مالیاتی اداروں کے ساتھ اپنے وسیع تعلقات کے ذریعے ان منصوبوں پر سرمایہ کاری کی راہ ہموار کرنے میں عراقی حکومت کی مدد کرے گی۔

عراقی وزارت بجلی کے سرکاری ترجمان ،مصعب المدرس نے کہا کہ " ہماری توجہ عراق کی تعمیر نو پر ہے تاکہ عوام کو مستحکم اور پائیدار ترقی فراہم کی جائے اور بجلی کے شعبہ کو ترقی دینا ان کوششوں کا ایک اہم جزو ہے۔جی ای کا ایکشن پلان ہماری ضروریات کے لیے انتہائی موزوں

ہے " ۔جی ای پاور کے پریذیڈنٹ اور سی ای او، رسل اسٹوکس نے کہا کہ " عراق میں ہماری موجودگی کی بنیاد بھروسے، شراکت داری اور اس کامیابی پر ہے جو پچاس سال کے عرصہ پر محیط ہے۔عراق کی تعمیر نو پر حکومت کی توجہ میں مدد کرنا ہمارے لیے اعزاز ہے اور ملک میں جہاں بھی ضرورت ہو بجلی کی فراہمی کے اپنے ورثے پر ہمیں فخر ہے " ۔

مزید : کامرس