کرپشن ،غیر قانونی بھرتی ، 12 ملزموں کا 15روزہ جسمانی ریمانڈ

کرپشن ،غیر قانونی بھرتی ، 12 ملزموں کا 15روزہ جسمانی ریمانڈ

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے نیشنل ہائی وے اتھارٹی کی زمین کی مد میں کروڑوں روپے ہڑپ کرنے اور آئی جی پویس آفس میں غیر قانونی بھرتیوں کے الگ الگ کیسوں میں گرفتار 12ملزموں 15روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا ہے ۔احتساب عدالت نمبر پانچ میں نیب نے نیشنل ہائی وے اتھارٹی کی زمین کی مد میں کڑوروں روپے خوردبرد کے کیس میں 4ملزموں نوید مراد، شوکت حسین ،حسن محمود اور محمد فاروق کو جسمانی ریمانڈ کے لئے عدالت میں پیش کیا۔عدالت کو بتایا گیا کہ دوران تفتیش 102افراد کا کیس سامنے آیا ہے جن کے نام پر فراڈ کیا گیاہے، نیشنل ہائی وے کے راستے میں آنے والی جگہ اصل مالکان کو دینا کاغذوں میں تحریر کیا اور بعد میں واؤچروں پر دستخط کرکے رقم خوردبرد کرلی۔عدالت نے وکلا ء کے دلائل اور ریکارڈ کی پڑتال کے بعد ملزموں کو15روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کرنے کا حکم دے دیا ہے ۔علاوہ ازین احتساب عدالت نے آئی جی آفس میں جعل سازی سے سٹینوگرافر بھرتی ہونے کے کیس میں گرفتار 8ملزموں فیاض احمد، عمران طارق، محمد وارث، ناصرعلی،محمد اسماعیل،محمد عالم، محمد آصف اور امداد حسین کو بھی 15روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیا ہے۔

مزید : صفحہ آخر /رائے