چکوال،قبضہ مافیا کا سرغنہ قانون کے شکنجے میں آگیا

چکوال،قبضہ مافیا کا سرغنہ قانون کے شکنجے میں آگیا

چکوال (ڈسٹرکٹ رپورٹر) قبضہ مافیا خدائی گرفت میں ۔نوسرباز نوید کہوٹ بھی قانون کے شکنجے میں آ گیا۔ تھانہ سٹی پولیس کے اسسٹنٹ سب انسپکٹر محمد ضمیر نے قبضہ مافیا کے سر غنہ چوہدری نوید اختر کہوٹ کو ڈرامائی انداز میں گرفتار کر لیا۔ شہرمیں پراپرٹی مافیا نے سیاسی چھتری تلے گزشتہ تین برسوں سے انت مچا رکھی تھی ۔ لوگوں کی جائیدادیں انکی لاعلمی میں فروخت کی جاتی رہیں ، اس کی واضح مثال ڈسٹرکٹ بار چکوال کے رکن مقامی وکیل کی ہے ۔ جس کی مالکیتی جگہ نوید اختر کہوٹ نے جعل سازی سے اشٹام پیپرز پر اپنے ملازم کو فروخت کر دی ۔ مقامی وکیل کی تحریری درخواست پر تھانہ سٹی پولیس نے ڈرامائی انداز میں قبضہ مافیاکے سرغنہ کو گرفتار کر لیا ۔ اسسٹنٹ سب انسپکٹر محمد ضمیر نے میرٹ پر تفتیش کر کے نوید اختر کہوٹ کو گرفتار کر لیا ۔ نوید اختر کہوٹ کی گرفتاری کی اطلاع ملتے ہی اس کو چھڑوانے کے سفارشیوں کی لائنیں لگ گئیں، مگر تھانہ سٹی چکوال کے ایس ایچ سید نصیر شاہ نے کسی بھی قسم کا دباؤ قبول نہ کرتے ہوئے سفارشیں رد کردیں۔قبضہ مافیا کے سرغنہ اور نو سرباز نوید اختر کہوٹ کی گرفتاری ’’ٹاک آف دی ٹاؤن ‘‘ بن گئی۔ سوشل میڈیا و الیکٹرانک چینلز نے اس خبر کو نمایاں انداز میں کوریج دیں۔ واضح رہے کہ نوید اختر کہوٹ کی گرفتاری کے بعد اس کے مبینہ سرپرستوں اور محکمہ مال ے کئی ایک افسران کے چہروں سے نقاب اترنے والاہے۔ پبلک آئی نے اس حوالے سے پراپرٹی مافیا کے خلاف سنسنی خیز تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر