چوآسیدن شاہ،بندکرائی جانیوالی مائن میں حادثہ،1کان کن جاں بحق

چوآسیدن شاہ،بندکرائی جانیوالی مائن میں حادثہ،1کان کن جاں بحق

چوآسیدن شاہ (نمائندہ پاکستان) محکمہ انسپکٹریٹ آف مائن راولپنڈی ریجن کی جانب سے بند کرائی جانے والی مائن میں حادثہ لیزمالکان کی غفلت اور لاپرواہی سے ایک کان کن جاں بحق تفصیلات کے مطابق اقبال منرلز کمپنی چوآسیدن شاہ کے رقبہ دوالمیال کی مائن اسد مائن جسکو گذشتہ ہفتے دوران انسپکیشن جو نیئر انسپکٹر آف مائن میاں افضل حسین نے خطرناک قرار دیتے ہوئے فوری بند کردیا تھا جسکے بعد لیز مالکان نے زبردست اور سینہ زوری سے محکمہ انسپکٹریٹ آف مائن راولپنڈی ریجن کی اجازت کے بغیر کوئلہ نکالنے کا سلسلہ جاری رکھا اور محکمہ مائن اینڈ منزلز پنجاب کے قوانین کی دھجیاں اُڑتے ہوئے مائن کی خطرناک حالت کے باوجود ٹائم لگوائے اور کوئلہ نکالہ جسکے نتیجے میں آج دوران کام کول کٹر بخت عالم مائن کی چھت سے پتھر لگنے سے موقعہ پر جاں بحق ہوگیاجبکہ محکمہ انسپکٹریٹ آف مائن راولپنڈی ریجن کے انسپکٹر چوہدری محمد اشرف بھی موقع پر پہنچ گئے اور معاملہ کی مکمل صورت حال دیکھ کر انکوائری مقرر کر دی ہے جبکہپاکستان مائن ورکرز فیڈریشن (رجسٹرڈ ) کے مرکزی چیئرمین راسعید خٹک نے اس حادثہ پر افسوس کرتے ہوئے غمزدہ خاندان سے مکمل یکجہتی کا اظہار کیا ہے اور حکومت سے اپیل کی ہے کہ حادثات کی روک تھام کے لئے اب ہمیں عملی اقدامات اُٹھانے ہونگے تاکہ کان کنان کی قیمتی جانیں ضائع ہونے سے بچ سکیںیاد رہے کہ چند دن قبل ہی اقبال منرلز کمپنی چوآسیدن شاہ کے رقبہ دوالمیال کی "امجد مائن" جس میں مائن ٹھیکہ دار ٹیپوسلطان بند مائن میں زیریلی گیس ہونے کی وجہ سے جاں بحق ہوگیا تھا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر