المناک حادثہ ، ایک ہی خاندان کے 12افراد ملتان میں سپرد خاک

المناک حادثہ ، ایک ہی خاندان کے 12افراد ملتان میں سپرد خاک

  

ملتان (سٹی رپورٹر ‘نیوز رپورٹر ‘ خبر نگار خصوصی) ڈی جی خان میں ہونے والے گزشتہ سے پیوستہ شب کے خوفناک حادثے کے باعث زندگی کی بازی ہارنے والے ایک ہی خاندان کے 12 افراد محمد حسین، محمد مجید،عنایت،جوہر رضا،اللہ دتہ آفریدی،محمد یوسف،محمد ساجد،محمد جمشید،محمد حامد،محمد غضنفر،طاہر اور سجادکی اجتماعی نماز جنازہ 4 بجے سیوڑہ چوک ادا کی گئی ، نماز جنازہ کے بعد ایم ڈی اے کے قریب واقع قبرستان پیراں صاحب میں متوفیان کی تدفین عمل میں لائی گئی، ملتان کے علاقے رضا آباد سے تعلق رکھنے والے بدقسمت خاندان غم سے نڈھال ہے،رضا آباد میں جنازے اٹھے تو کہرام مچ گیا ، شہر اولیاکی فضا مکمل طور پر سوگوار ،لواحقین نے سینہ کوبی بھی کی ،نماز جنازہ اور تدفین کے وقت رقت آمیز مناظر ،نماز جنازہ امام بارگاہ باب العلوم کے متولی سید حسن شیرازی پڑھائی،نماز جنازہ میں مخدوم جاوید ہاشمی ، بابو نفیس انصاری ،علامہ شوکت رضا شوکت ، ناصر حیدری ،اعجاز جنجوعہ، کاشف ظہور نقوی ، مولانا غلام مصطفی ، ودیگر سیاسی سماجی رہنماوں کے علاوہ ہزاروں افراد نے شرکت کی ، لمحوں کی غلطی ایک ہی خاندان کے 13 افراد کی جان لے گئی،52 افراد پر مشتمل یہ خاندان ڈیرہ غازی خان سے مجلس عزا سے واپسی آرہا تھا کہ سامنے سے آنے والی بس سے تصادم ہوگیا،، حادثہ پر ہر آنکھ اشک بار اور ہر گھر سے آہوں اور سسکیوں نے فضا کو سوگوار کردیا ہے،، حکومتی جماعت کی نمائندگی کرتے ہوئے ایم ڈی بیت المال عون عباس بپی، مشیر وزیر اعلیٰ پنجاب حاجی جاوید اختر انصاری سیمت ڈپٹی کمشنر ملتان مدثر ریاض ملک نے غم زدہ خاندانوں کے لواحقین سے تعزیت کی، ایم ڈی بیت المال کا کہنا تھا کہ متاثرہ خاندانوں کی بھرپور امداد کی جائے گی وزیر اعظم ہاؤس سے احکامات تھے جو لوگ ملتان کے اس واقعہ میں جابحق ہوئے ہیں‘ان کی بھرپور امداد کی جائے گی۔ وزیر اعظم سعودیہ عرب کے دورہ پر جا رہے ہیں جیسے واپس آئے گے ان خاندانوں کے لیے امداد کا اعلان کر دیا جائے گا۔ہم ان لوگوں کے غم میں برابر کے شریک ہیں ان کی جتنی امداد ہوسکی کی جائے گی۔ ، جاں بحق افراد میں تین سگے بھائی عنایت.محمد حسین اور مجید تنیوں بھائی سالڈ ویسٹ منیجمنٹ میں ملازمت کرتے تھے. مائیں ، بہنیں گھروں کے سربراہ، گھر کے لعل کے جاں بحق ہونے پر دھاڑین مار کرروتی رہیں ، اور سفاک ڈرائیورز کو دہائیاں دیتی رہیں متوفیان کے اہل خانہ کی جانب سے حادثہ کے زمہ داروں کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا گیا ہے ۔دریں اثناء وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے ڈیرہ غازی خان میں المناک ٹریفک حادثے میں قیمتی جانو ں کے ضائع پر لواحقین سے اظہار افسوس اور مرحومین کے ثواب کیلئے دعا کی ہے۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے گزشتہ روز اسلام آباد سے مرحوم کے لواحقین غلام جعفر اور حبیب اللہ کو ٹیلی فون کیا اور ان کے خاندان کے افراد کے حادثے میں جاں بحق ہونے پر افسوس کا اظہار کیا۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا کہ میں آج سعودیہ عرب جارہا ہوں اور خانہ کعبہ میں مرحومین کے درجات کی بلندی کیلئے دعا کرونگا۔ اگر میں ملک میں ہوتا تو نماز جنازہ میں شریک ہو کر لواحقین کی دلجوئی کرتا۔ وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے زخمیو ں کی جلد اور مکمل صحت یابی کیلئے دعا کی ہے۔ دریں اثناء و فاقی پارلیمانی سیکرٹری برائے خزانہ مخدومزادہ زین حسین قریشی نے بھی ڈیرہ غازی خان میں المناک ٹریفک حادثے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے مرحومین کے درجات کی بلندی اور زخمیو ں کی صحت یابی کیلئے دعا کی ہے‘ جبکہ ڈپٹی کمشنر ملتان نے ڈیرہ غازیخان حادثے میں جاں بحق افراد کے اہل خانہ سے تعزیت کے لئے ان کے گھر گئے اس موقع پر ضلعی حکام بھی ان کے ہمراہ تھے۔ ڈپٹی کمشنر نے حادثے میں جاں بحق افراد کے اہل خانہ سے تعزیت کی اور حکومت پنجاب کی جانب سے ہر ممکن امداد کا یقین دلایا۔ ڈپٹی کمشنر مدثرریاض ملک نے کہاکہ دکھ کی اس گھڑی میں حکومت پنجاب لواحقین کے ساتھ کھڑی ہے۔ ورثاء کی مالی کفالت سمیت ہر ممکن فلاح و بہبود کے اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حادثے میں جاں بحق ہونے والے 5سنیٹر ی ورکرز کے ورثاء کو ویسٹ مینجمنٹ کمپنی میں ملازمتیں فراہم کی جائیں گی جبکہ گھر کے اخراجات کے لئے بھی کیس حکومت کو بھجوایا جائے گا۔ ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ حادثے کے زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔ بعدازاں ڈپٹی کمشنر نے مرحومین کے درجات کی بلندی کے لئے دعا بھی کرائی۔ قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے ڈی جی خان میں ہونے والے ماتمی تنظیم کی بس کو حادثہ کے بارے میں ٹیلی فون پر شیعہ علما کونسل کے ترجمان بشارت عباس قریشی سے معلومات لیں اور اس حادثہ میں جانی نقصان پر گہرے دکھ اور غم کا اظہار , لواحقین سے اظہار تعزیت اور زخمی ہونے والوں کی مکمل صحت یابی کی دعا کرتے ہوئے کہا کہ یہ بہت بڑا حادثہ ہے جس میں عزاداری کا سرمایاہمارے ماتمی شہید ہو گئے ہیں انہوں نے کہا ہم لواحقین کے دکھ اور غم میں برابر کے شریک ہیں دکھ کی اس گھڑی میں وہ اپنے آپ کو تنہا نہ سمجھیں پوری ملت ان کے غم میں شریک ہے انہوں نے کہا کہ زخمیوں کو اس وقت بہتر علاج کی ضرورت ہے جو حکومت کی ذمہ داری ہے انہوں نے کہا کہ حکومت شہداء اور زخمیوں کی مالی امداد کا بھی فوری اعلان کرے اس سانحہ پر وفاق علماء شیعہ پاکستان کے مرکزی جنرل سیکریٹری علامہ اختر حسین نسیم شیعہ علما کونسل پنجاب کے صدر مولانا موسیٰ رضا جسکانی مرکزی تنظیم لائسنسداران عزاداری امام حسینؑ کے صدر مذین عباس چاون نے بھی انتہائی دکھ اور غم کا اظہار کیا ہے ۔دریں اثناء ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ملتان کی جانب سے ڈیرہ غازی خان میں ہونے والے سانحہ پر اظہار افسوس کیلئے آج 23اکتوبر کو مکمل ہڑتال کی جائے گی اور وکلاء مقدمات کی پیروی کے لئے عدالتوں میں پیش نہ ہوں گے۔ اس ضمن میں جنرل سیکرٹری ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن جاوید اقبال اوجلہ کے مطابق سانحہ میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین سے اظہار یکجہتی کیلئے ڈسٹرکٹ بار مکمل ہڑتال کرے گی اور مرحومین کا غائبانہ نماز جنازہ صبح ساڑھے 10 بجے پڑھایا جائے گا جس کے بعد مغفرت کیلئے دعا بھی کرائی جائے گی۔ڈیرہ غازی خان بس حادثہ کے چار زخمی نشتر ہسپتال منتقل کئے گئے ہیں جس میں 22 سالہ سلمان ولد اکبر، 40 سالہ فداحسین ولد خدابخش، 20 سالہ غلام رضا ولد سعید اور 45 سالہ کاشف ولد عبدالمجید شامل ہیں، زخمیوں کو طبی امداد دی جا رہی ہے۔

ڈیرہ غازیخان (سٹی رپورٹر‘ نمائندہ خصوصی ) بس حادثہ کے باعث ڈیرہ غازیخان میں سوگ کا سماں وزیر اعلیٰ پنجاب نے واقعہ کا نو ٹس لیتے ہوئے کمشنر ڈیرہ سے حادثہ بارے رپورٹ طلب کر لی اور زخمیوں کا سرکاری سطح پر علاج کرانے کی ہد ایت کردی۔ تفصیل کے مطابق اتوار کی شب غازی گھاٹ کے قریب دو مسافر بسوں میں تصادم کے نتیجہ میں 19افراد جاں بحق اور تقریباً 35افراد شدید زخمی ہو گئے تھے مرنے والے میں ملتان سے تعلق رکنے والے ایک ہی خاندان کے بارہ افراد سمیت 3سگے بھائی عنایت، محمد حسین اور مجید بھی شامل ہیں اس سلسلے ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر ڈاکٹر ناطق حیات نے بتایا کہ دو شدید زخمیوں کو تشویشناک حالت کے پیشہ نظر ملتان منتقل کر دیا گیا جبکہ باقی26زخمیوں کا ڈسٹرکٹ ٹیچنگ ہستپال ڈیرہ میں علاج جاری ہے اس مو قع پر وزیر اعلی پنجاب کے بھائی سردار جعفر خان بزدار، ایم پی اے ڈاکٹر شاہینہ نجیب کھوسہ ، محمد لطیف پتافی ، کمشنر طاہر خورشید نے زخمیوں کی عیادت کی اور ہستپال کے ڈاکٹرز و عملہ کو بروقت طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہد ایات دیں۔جبکہ ڈی پی او ڈیرہ عمران یعقوب نے غازی گھاٹ کے قریب دو بسوں کے درمیان ھونے والے جائیحادثہ کا دورہ کرتے ھوئے حادثہ کے سد باب جانے اور آئندہ اس قسم کے حادثات سے عوام کو محفوظ رکھنے کے لیے فوری انوسٹی گیشن کر کے رپورٹ پیس کرنے کا حکم دیا اس موقع پرڈی پی او نے کہا کہ ٹریفک پولیس، PHP پولیس سمیت تمام متعلقہ ادارے حادثہ کاجائزہ لے رھے ہیں اور اس قسم کے حادثات کے روک تھام کو ھر ممکن یقینی بنایا جائے گا انہوں نے کہا کہ حادثہ میں جانبحق ہونے والوں کے ورثاء سے اظہار افسوس کرتے ھوئے مغفرت کی دعا کی۔اور کہا کہ وزیر آعلی پنجاب کی ھدایت کے مطابق زخمی ہونے والوں کا ہسپتال میں ڈاکٹرز کی نگرانی میں علاج جاری ھے اور انہیں ھر ممکن فری طبی امداد فہراھم کی جا رھی ھے اللہ پاک زخمیوں کو جلد صحت یاب کریں۔اس موقع پر ان کے ھمراہ ڈی ایس پی صدر و دیگر پولیس آفسران بھی موجود تھے۔ادھر ڈیرہ غازیخان کے مقام غازیگھاٹ کے نزدیک گزشتہ شب ہونے والے ہولناک بس حادثہ کے31 زخمیوں کی ٹیچنگ ہسپتال میں علاج معالجہ کیا جارہاہے جن میں سے دو شدید زخمی بھی شامل ہیں . کمشنر طاہر خورشید نے ہسپتال انتظامیہ کو تمام زخمیوں کے بہتر علاج معالجہ کی ہدایات جاری کرتے ہوئے بتایاکہ بس حادثہ کے 19جاں بحق ہونے والے افراد کی میتیں سرکاری خرچ پر ان کے آبائی علاقوں کو روانہ کر دی گئی ہیں جن میں سے 15کا تعلق ملتان اور چار کا مظفرگڑھ سے ہے . واضح رہے کہ حادثہ کی اطلاع پر ڈپٹی کمشنر علی اکبربھٹی ہسپتال پہنچے اور زخمیو ں کی آمد سے قبل ٹراما سنٹر میں اضافی بیڈ لگانے ، ڈاکٹرز او رپیرا میڈیکل سٹاف کی چھٹیاں منسوخ کرتے ہوئے ڈیوٹی پر لانے سمیت بنیادی و دیہی مرکز صحت ، ٹی ایچ کیو ہسپتال تونسہ کے علاوہ انتظامی ڈاکٹروں کو بھی ٹیچنگ ہسپتال بلالیا اور ہر ز خمی کی ہسپتال آمد پر بہتر علاج معالجہ اور لواحقین کی رہنمائی کیلئے انتظامات کی نگرانی کرتے رہے . کمشنر طاہر خورشید زخمیوں کی آمد پر ہسپتال پہنچے اور موقع پر موجود رہ کر علاج معالجہ کی سہولیات کو یقینی بنایا۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -