یوٹیلیٹی اسٹورزکارپوریشن ملازمین کے دھرنے کا دوسرا روز، یوٹیلیٹی اسٹورزکارپوریشن کی نجکاری مستردکردی

یوٹیلیٹی اسٹورزکارپوریشن ملازمین کے دھرنے کا دوسرا روز، یوٹیلیٹی ...
یوٹیلیٹی اسٹورزکارپوریشن ملازمین کے دھرنے کا دوسرا روز، یوٹیلیٹی اسٹورزکارپوریشن کی نجکاری مستردکردی

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) یوٹیلیٹی اسٹورزکارپوریشن ملازمین کادھرنادوسرے روزبھی جاری ہے۔ملازمین نے یوٹیلیٹی اسٹورزکارپوریشن کی نجکاری مستردکردی اور مطالبہ کیا کہ حکومت 26ارب کے واجبات کی ادائیگی اورکنٹریکٹ ملازمین کومستقل کرے۔ جبکہ حکومت کی طرف سے جو سبسڈی میں خرد برد کا الزام لگایا گیا ہے اس کے دستاویزی ثبوت بھی پیش کیے جائیں۔ملازمین نے الزام عائد کیا ہے کہ مشیرتجارت 14 ہزارملازمین کوبےروزگارکرناچاہتے ہیں۔واضح رہے کہ یوٹیلٹی اسٹورز کارپوریشن کے ملازمین کی ریلی اسٹور ہیڈ آفس سے نکالی گئی، یوٹیلٹی اسٹورز کارپوریشن کے ملک بھر سے آئے ملازمین اسلام آباد کے ڈی چوک پہنچے جہاں انہوں نے اپنے مطالبات کے حق میں دھرنا دیا جس کے باعث ڈی چوک کو ٹریفک کے لیے بند کردیا گیا۔دھرنے کے دوران مظاہرین اور حکومتی عہدیداران کے درمیان مذاکرات ہوئے جو ناکام ہوگئے جس کے بعد مظاہرین نے پارلیمنٹ ہاو¿س تک جانے کا اعلان کیا تاہم انتظامیہ نے انہیں پارلیمنٹ کی طرف جانے سے روک دیا۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ مظاہرین کو بلیو ایریا تک جانے کی اجازت دی گئی ہے، انہیں اس سے آگے نہیں جانے دیا جائے گا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد