’’جب آپ اپنے رشتے داروں سے ملنے جائیں اور والدین کا حکم ہو کہ۔۔۔‘‘حکومتی وزرا کی سعودی عرب میں اس تصویر پرسوشل میڈیا پر ایسے تبصرے کہ آپ کی ہنسی نہ رکے 

’’جب آپ اپنے رشتے داروں سے ملنے جائیں اور والدین کا حکم ہو کہ۔۔۔‘‘حکومتی ...
’’جب آپ اپنے رشتے داروں سے ملنے جائیں اور والدین کا حکم ہو کہ۔۔۔‘‘حکومتی وزرا کی سعودی عرب میں اس تصویر پرسوشل میڈیا پر ایسے تبصرے کہ آپ کی ہنسی نہ رکے 

  


ریاض (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیراعظم عمران خان وفد کے ہمراہ 2روزہ دورے پر سعودی عرب میں موجود ہیں ،عمران خان اور ان کے ہمراہ وفد کی سعودی حکام سے ملاقاتوں کی تصاویر سوشل میڈیا پر وقتاََ فوقتاََ شیئر کی جارہی ہیں جن پر عوام کی جانب سے ایسے ایسے تبصرے کئے جارہے ہیں کہ پڑھنے والوں کی ہنسی نہ رکے گی ۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر صارف کی جانب سے ایک تصویر شیئر کی گئی ہے،تصویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ’’ وزیرخزانہ اسد عمر ، شاہ محمود قریشی ،وزیر اطلاعات فوادچودھری اور دیگر موجود ہیں ۔رپورٹ کے مطابق تصویر سے اندازا لگایا جاسکتا ہے کہ سعودی حکام سے ملاقات کے دوران یہ تصویر لی گئی ہے.ٹوئٹر صارف نے سوشل میڈیا پر تصویر شیئر کرتے ہوئے کیپشن میں لکھا ہے کہ ’’ جب آپ اپنے امیر رشتے داروں سے ملنے جائیں اور والدین کا حکم ہو کہ تہذیب سے پیش آنا‘‘ ۔ تصویر کا سوشل میڈیا پر آنا تھا کہ صارفین کی جانب سے تبصروں کی برسات شروع ہوگئی ہے۔

ایک صارف منصور نے تصویر شیئر کرتے ہوئے لکھا کہ ’’ دیکھو خالہ کے گھر جا کر کوئی شرارت نہیں کرنی،تمیز سے بیٹھنا ہے،شور نہیں کرنا،خود پلیٹ میں کچھ نہیں ڈالنا،جو دیں وہی تمیز سے کھانا ہے۔ صارف نے مزید لکھا کہ فواد موٹو دوبارہ بسکٹ نہیں اٹھانااور اسد لمبو تم نے کوئی بونگی نہیں مارنی، قریشی اگر وہ پیسے دیں تو فوراً جیب میں نہیں ڈال لینے پہلے انکار کرنا ہے۔

دوسری جانب اس تصویر پر ’’نینا خان ‘‘ نامی صارف خاتون نے کمنٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ’’ ھاھاھاھا فقیروں کا ٹولہ‘‘‘ ۔

کاشف سلیم صارف نے کمنٹ کیا کہ ’’ اگر ایسا نہ کیا تو کل کلاں پناہ بھی نہیں ملنی‘‘۔

اسلان نامی صارف نے لکھا کہ ’’ ویسے فواد چودھری کو بال کٹوانے کی ضرورت ہے‘‘۔

ایک اور صارف نے لکھا کہ ’’ اڈیالہ جیل ونگ ‘‘ ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /عرب دنیا